لال حویلی پر حملہ، سوشل میڈیا صارفین کا شیخ رشید کے ساتھ اظہار یکجہتی Sheikh Rahseed
The news is by your side.

Advertisement

لال حویلی پر حملہ، سوشل میڈیا صارفین کا شیخ رشید کے ساتھ اظہار یکجہتی

راولپنڈی: شیخ رشید احمد کی رہائش گاہ لال حویلی پر حملے کے بعد سوشل میڈیا صارفین کی بڑی تعداد نے شدید احتجاج کیا اور عوامی مسلم لیگ کے سربراہ سے اظہار یکجہتی بھی کیا.

تفصیلات کے مطابق عوامی مسلم لیگ کے مرکز اور شیخ رشید احمد کی رہائش گاہ پر کچھ دیر قبل مسلح افراد نے حملے کی کوشش کی اور ملازمین کو حراساں بھی کیا۔

لال حویلی پر حملے کی خبر جیسے ہی نشر ہوئی سوشل میڈیا صارفین کی بڑی تعداد نے شیخ رشید احمد سے یکجہتی کا اظہار کیا اور مشتعل افراد کی جانب سے کیے جانے والے حملے کی شدید الفاظ میں مذمت بھی کی، عوامی نے اتنی زیادہ تعداد میں اپنے جذبات کا اظہار کیا کہ کچھ ہی لمحوں میں  کا ہیش ٹیگ ٹاپ ٹرینڈ بن گیا۔

پڑھیں: لال حویلی پر حملے کی کوشش، مقدمہ درج

فاطمہ کاجل نامی صارف نے لال حویلی پر حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کی اور شیخ رشید کے ساتھ یکجہتی کا اظہار بھی کیا۔

میاں فراز نامی صارف نے کہا کہ نوازلیگ پرانے حربے استعمال کرنے لگی ہے مگر وہ جانتے نہیں کہ پنڈی کے لوگ اس طرح حملوں سے خوفزدہ نہیں ہوں گے۔

افشین صباء نامی صارف نے کہا کہ اس طرح کے حملے صحیح نہیں اور ان کے ذریعے شکست نہیں دی جاسکتی۔

سردار عمیر نامی صارف نے کہا کہ ہم شیخ رشید کے ساتھ ہیں،گلو بٹوں کے خلاف ہمیں مضبوطی سے کھڑا ہونا ہے کیونکہ وہ اس وقت جنجھلاہٹ کا شکار ہیں۔

عاطف متین انصاری نامی صارف نے شیخ رشید کو محفوظ رہنے کا مشورہ دیا

قیصر ترین نامی صارف نے ایک شعر لکھ کر اپنا احتجاج ریکارڈ کروایا

حیدر ملک نامی صارف نے کہا کہ مسلم لیگ ن شیخ رشید اور لال حویلی سے ذاتی عناد اتار رہی ہے

سید وسیم حیدر نامی صارف نے کہا کہ ہر حربہ جب ناکام ہو جائے تو لوگ ذات پر حملہ کرتے ہیں کیونکہ انکے پاس جواب دینے کو کچھ نہیں ہوتا یہ بہت گری حرکت ہے۔

دوسری جانب تھانہ وارث خان میں لال حویلی پر حملے کا مقدمہ شیخ رشید احمد کے بھتیجے راشد رفیق کی مدعیت میں درج کرلیا، مقدمے میں مسلم لیگ ن کے ناظم سمیت کارکنان کو نامزد کیا گیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں