The news is by your side.

Advertisement

آزاد کشمیر میں لینڈ سلائیڈنگ اورچھتیں گرنے سے باسٹھ افراد ہلاک

آزاد کشمیر:طوفانی بارشوں اورسیلابی صورتحال نے آزاد کشمیرمیں تباہی مچادی ہے۔ لینڈ سلائیڈنگ اورچھتیں گرنے سے مرنےوالوں کی تعداد باسٹھ ہوگئی جبکہ سوسے زیادہ زخمی ہیں ۔ طوفانی بارشوں نے آزاد کشمیراورگلگت بلتستان میں لوگوں شدید مشکلات میں مبتلاکردیا۔ مسلسل بارشوں سےسیلابی صورتحال کا سامنا ہے ۔

پانی کی بپھری لہروں سے کئی مقامات پر بند ٹوٹ گئے جس سے قریبی آبادیاں زیر آب آگئیں۔ایس ڈی ایم اے کے سیکر یٹری اکرم سہیل کے مطابق بارشو ں اور سیلابی پانی سے سے چار ہزار سے زائد مکانات تباہ اور دیگر املاک کو بھی شدید نقصان پہنچا۔ پندرہ سے زائد چھوٹے بڑے پل اوردس ہائیڈرل پاور پروجیکٹ بھی بے رحم موجوں سے تباہ ہوگئے۔

ایس ڈی ایم اے کا کہنا ہے کہ حالیہ بارشوں اورسیلابی پانی سے آزاد کشمیرکی شاہرا ہوں کا دوارب روپے سے زائد کا نقصان ہوا ہے۔ محکمہ اطلاعات گلگت بلتستان کے مطابق اضلاع کے اسسٹنٹ کمشنرزکےدفاترمیں کنٹرول روم قائم کردیئےگئےہیں۔

گلگت اورآزاد کشمیرمیں انتظامیہ کی جانب سے امدای کاروئیاں جاری ہیں۔۔ شدید بارشوں اورندی نالیوں میں طغیانی کے باعث ریسکیواداروں کوامدادی کاموں میں مشکلات کا سامنا ہے۔آزاد کشمیر کے ڈسٹرکٹ باغ حویلی کے گاؤں خورشید آباد میں لینڈ سلائیڈنگ کے باعث دو مکان تباہ ہو گئے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں