The news is by your side.

Advertisement

ارکان پارلیمنٹ کے اثاثوں کی تفصیلات ویب سائٹ پرجاری

الیکشن کمیشن نے ارکان اسمبلی کے اثاثہ جات کی وہ تفصیلات افشا کی ہیں جو سیاستدانوں انہیں فراہم کیں، ملک کی بڑی سیاسی جماعتوں، ن لیگ، تحریک انصاف اور پیپلزپارٹی کے سربراہان کے ظاہر کردہ اثاثے الیکشن کمیشن نے اپنی ویب سائٹ پر جاری کر دیئے ہیں۔

غریب ملک کے امیر سیاستدان، الیکشن کمیشن نے اثاثوں کی تفصیلات جاری کردیں، وزیراعظم نواز شریف ایک ارب ،بیاسی کروڑ، چالیس لاکھ، چوالیس ہزار دو سو تینتیس روپے کے مالک ہیں، وزیراعظم کی اہلیہ کے زیورات کی مالیت پندرہ لاکھ ظاہر کی گئی، حمزہ شہباز کے اثاثوں کی مالیت پچیس کروڑ ہے، جسمیں شریف پولٹری فارم فقط دس ہزار اور کرسٹل پرائیویٹ کی مالیت صرف پینتالیس ہزار بتائی گئی ہے۔

تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے اثاثے دو کروڑ چھیانوے لاکھ ظاہر کئے، ان کا بنی گالہ کا گھر تحفے میں جبکہ لاہور کا گھر ،میانوالی اور بھکر کی اراضی وراثت میں ملی ہے، جن کی مالیت ظاہر نہیں کی گئی، پیپلز پارٹی کے صدر امین فہیم راولپنڈی میں فارم ہاوس، دبئی میں اپارٹمنٹ پانچ بنگلوں اور ان کے بچے تین سو ایکڑ زرعی اراضی کے مالک ہیں، مولانا فضل الرحمان کے کل اثاثے تہتر لاکھ اٹھارہ ہزار تین سو اسی روپے کے ہیں،

مولانا کے بینک اکاوٴنٹس میں سولہ لاکھ آٹھ ہزارتین سو اسی روپے جبکہ زیورات کی مالیت ساڑھے نولاکھ کے لگ بھگ ہے، فاروق ستار کے کل اثاثوں کی مالیت چھتیس لاکھ اکتالیس ہزار ایک سو اڑسٹھ روپے ظاہر کی گئی ہے، فہمیدہ مرزا کے بینک اکاؤنٹ میں بیالیس لاکھ اڑتالیس ہزار روپے ہیں، کروڑوں کی زمین اور گھر بھی ان کے نام ہیں، شازیہ مری کے پاس پانچ تولے سونا اور پچیس ہزار روپے نقد کے علاوہ بینک میں ایک لاکھ باہتر ہزار روپے ہیں، ان کے پاس کوئی گاڑی نہیں۔

فریال تالپور کے مطابق ان کے پاس پندرہ کروڑ اٹھہتر لاکھ ننانوے ہزارنو سو ننانوے روپے ہیں، نوید قمر کے اثاثوں کی مالیت سترہ کروڑ باہتر ہزار سے زیادہ ہے، خورشید شاہ کے مطابق ان کے پاس ہیں پچھتر لاکھ روپے کے بانڈز، کیش اور ان کے نام سوا کروڑ کی زمین بھی ہے لیکن ان کے پاس کوئی گاڑی نہیں، شفقت محمود کی گھرکی مالیت پچیس لاکھ اور تیرہ کروڑ چالیس لاکھ کے پلاٹ ہے۔

اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق کے گھرکی قیمت پانچ کروڑ روپے اور کل اثاثے سترہ کروڑ روپے سے زائد ہیں، خواجہ سعد رفیق  سینتیس لاکھ کا کاروبار کرتےہیں، ان کے پاس ایک کروڑ دو لاکھ کا گھرسڑسٹھ لاکھ ننانوے ہزار کا پلاٹ اکتیس لاکھ کی دو گاڑیاں ہیں، غلام ربانی کھر کے اثاثوں میں پانچ لاکھ کا گھر بیوی کے نام، بیس لاکھ کا کاروبار اور چھیاسی لاکھ کی پانچ گاڑیاں بیوی کے نام، پچاس لاکھ کا زیور تحفے میں ملا۔

اویس لغاری کے پاس تیرہ کروڑ سے زائد مالیت کے اثاثے ہیں، شاہ محمود قریشی کا ملتان میں پلاٹ ہے، جس کی مالیت ساڑھے ستاون لاکھ روپے ہیں، بیٹے کے نام ایک کروڑ مالیت کی زمین لاہور اور اسلام آباد میں گھر اور بینکوں میں دو کروڑ روپے سے زائد رقم موجود ہے، جاوید ہاشمی کے اثاثوں میں زرعی زمین کی مالیت پانچ کروڑ، شہری جائیداد دو کروڑ روپے کی اور تین لاکھ کے پرائز بانڈ، سونا ساڑھے پانچ لاکھ روپے کا ہے۔

عابد شیرعلی ساڑھے تین کروڑ روپے سے زائد اثاثوں کے مالک ہیں، چوہدری پرویزالٰہی کے اثاثوں میں پچاس لاکھ چالیس ہزار کی زمین، ننانوے لاکھ ستتر ہزار کا کاروبار، ڈھائی کروڑ کے شیئرز، سات کروڑ انسٹھ ہزار روپے کا قرضہ، دو کروڑ مالیت کی گاڑیاں، چار کروڑ چھیاسٹھ لاکھ کیش شامل ہیں، چوہدری نثار گھر کے اثاثوں میں فارم ہاؤس نوفلیٹس ہیں جو سب ورثے میں ملے۔

شیخ رشید کے پاس صرافہ بازار راولپنڈی میں مارکیٹ ساڑھے سولہ لاکھ روپے ، بحریہ ٹاون میں گھر، ذاتی استعمال کی گاڑی اٹھارہ لاکھ اکسٹھ ہزار روپے کی ہے، کیپٹن (ر)محمد صفدرعباسی کے پاس دو پلاٹ جس کی مالیت دس لاکھ روپے، بی ایم ڈبلیو گاڑی جس کی مالیت ساٹھ لاکھ روپے ہیں، پی ٹی آئی کے مراد سعید کا کوئی کاروبار ہے نہ گھر نہ گاڑی اور نہ زیور ہیں۔

اسد عمر کے پاس گیارہ کروڑ کے کراچی میں ڈی ایچ اے میں پلاٹس تیس کروڑ تیس لاکھ کے گھر بیوی کے نام، نو لاکھ ترانوے ہزار کے شیئرز، انتالیس کروڑ گیارہ لاکھ  کے یونٹ سرٹیفکیٹس ہیں، اسد عمر کے کل اثاثے اکسٹھ کروڑ بانوے لاکھ روپے سے زائد ہیں۔
    
   

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں