The news is by your side.

Advertisement

اسلام آباد ہائیکورٹ: ممتازقادری کی سزائے موت کیخلاف اپیل پر فیصلہ محفوظ

اسلام آباد: وفاقی دارلحکومت میں اسلام آباد ہائیکورٹ نے سابق گورنر پنجاب سلمان تاثیر قتل کیس میں ممتاز قادری کی سزائے موت کیخلاف اپیل کی سماعت پر فیصلہ محفوظ کر لیا ہے۔

جسٹس نورالحق قریشی اور جسٹس شوکت عزیزصدیقی پر مشتمل دو رکنی بنچ نے ممتاز قادری کی جانب سے سزائے موت کے خلاف اپیل پر سماعت کی۔

اس موقع پر ایڈووکیٹ جنرل اسلام آباد عبدالرؤف صدیقی نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ کوئی برے کردار کا مالک ہو تب بھی کسی کو اختیار حاصل نہیں کہ اسے قتل کردیا جائے، یہ بات درست نہیں کہ واقعے سے قبل سلمان تاثیر اور ممتاز قادری کے درمیان کوئی مکالمہ ہوا تھا، ہر صورت قانون پر عملدرآمد ضروری ہے۔

عدالت نے دلائل سننے کے بعد ممتاز قادری کی سزائے موت کے خلاف اپیل پر فیصلہ محفوظ کرلیا ہے۔

یاد رہے کہ پولیس اہلکار ممتازقادری نے چارجنوری 2011ء میں گورنر پنجاب سلمان تاثیر کو راولپنڈی میں قتل کردیا تھا، جس کے فوری بعد ملزم کے ساتھی اہلکاروں نےا ُنہیں حراست میں لے لیا تھا اور انسدادِ دہشتگردی کی عدالت نے اُسے دومرتبہ موت کی سزاسنائی تھی لیکن عمل درآمد روک دیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ ممتاز قادری کی سزائے موت کے خلاف اپیل ایک عرصے سے زیرِ سماعت ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں