The news is by your side.

Advertisement

اسلام آباد: جوڈیشل کمیشن میں سابق الیکشن کمشنر پنجاب پرجرح

اسلام آباد: انتخابی دھاندلی کی تحقیقات کرنے والے جوڈیشل کمیشن میں سابق الیکشن کمشنر پنجاب محبوب انور نے بتایا ہے کہ تمام انتظامیہ ان کی ہدایت پر عمل کررہی تھی، نو مئی کوبیلٹ پیپرزکی نمبرنگ اور بائنڈنگ کیلئے افسران مانگے تھے۔

سپریم کورٹ اسلام آباد میں چیف جسٹس ناصر الملک کی سربراہی میں جوڈیشل کمیشن کے اجلاس میں آج پھر سابق الیکشن کمشنرپنجاب محبوب انور پر جرح کی گئی ۔

تحریکِ انصاف کے وکیل عبدالحفیظ پیرزادہ نے محبوب انور سے پوچھا کہ کل عدالت سے باہر جانے کے بعد اپ کا کسی سے رابطہ ہوا تو محبوب انور نے انکار میں جواب دیا۔

عبدالحفیظ پیرزادہ نے کمیشن کو بتایا کہ انکے حوالے سے ایک انگریزی اخبار میں خبر شائع ہوئی ہے، حفیظ پیرزادہ نے خبر کو ریکارڈ کا حصہ بنانے کی سفارش کی۔

حفیظ پیرزادہ نے انور محبوب سے استفسار کیا کہ کہ کیا فارم5 کےذریعے اضافی بیلٹ پیپر مانگے جاسکتے ہے۔

انور محبوب نے بتایا کہ فارم فائیو میں امیدواروں کے نام ہوتے ہے، اضافی بیلٹ پیپر کے لیے الگ درخواست ہوتی ہے، چیف جسٹس نے بھی ان سے سوال کیا کہ کیا نو مئی کی شام راؤ افتخار کو فون کیا تھا تو محبوب انور نے جواب دیا نمبرنگ اور بائینڈنگ کے لئے کچھ افسران چاہئے تھے، جو ان سے مانگے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں