افغان حکومت اور طالبان بات چیت جاری رکھنے پر متفق ہو گئے -
The news is by your side.

Advertisement

افغان حکومت اور طالبان بات چیت جاری رکھنے پر متفق ہو گئے

اسلام آباد: افغان حکومت اور طالبان بات چیت جاری رکھنے کیلئے آمدہ ہوگئے، پاکستان ، افغانستان، طالبان، امریکہ ا ور چین کے اس مذاکراتی عمل کو مری امن مذاکرات کا نام دیا گیا ہے، چین کی شرکت سیاست کا نیا موڑ سامنے لائی ہے۔

افغان حکومت اور طالبان کے درمیان بات چیت کا ایک اور دور مکمل ہوا، جس کا میزبان پاکستان تھا ، مری میں ہونے والی بات چیت میں پاکستان ، افغانستان، طالبان، امریکہ ا ور چین شامل تھے، مذاکرات کے اس عمل کو مری امن عمل کا نام دیا گیا ہے۔

فریقین نے بات چیت کے آغاز کو خوش آئند قرار دیا، سرکاری ذرائع کا کہنا ہے کہ فریقین مذاکرات کے مستقبل سے پُرامید ہیں، جس کا دوسرا دور عید کے بعد ہوگا۔

مذاکرات میں افغان وفد کے سربراہ اور نائب وزیر خارجہ حکمت کرزئی نےکابل میں میڈیا کو بتایا کہ مذاکرات کے باوجود طالبان کے خلاف جاری فوجی آپریشن روکنے کا فیصلہ نہیں کیا گیا۔ جبکہ افغان طالبان کے بیان میں کہا گیا ہے کہ وقت کے ساتھ ساتھ پالیسیوں میں تبدیلی لائی گئی ہے، مذاکرات میں چین کی شرکت اب تک کی سیاست میں نیا موڑ سامنے لائی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں