افغان حکومت اور طالبان کے درمیان امن مذاکرات کا دوسرا دور اسلام آباد میں جاری -
The news is by your side.

Advertisement

افغان حکومت اور طالبان کے درمیان امن مذاکرات کا دوسرا دور اسلام آباد میں جاری

اسلام آباد : افغان طالبان اورافغان حکام کے مابین مزاکرات کا دوسرا دور جاری ہے، پہلے دور میں مزاکرات کا عمل جاری رکھنے پراتفاق کیا گیا، اسلام آباد میں ہونے والی طالبان افغان حکومت بات چیت کا میزبان پاکستان ہے جب کہ ان مذاکرات کو پاکستان ، امریکہ اوراقوام متحدہ سمیت چین کی حمایت حاصل ہے۔

اسلام آباد میں سرکاری زرائع کے مطابق افغان حکومت اورافغان طالبان کے درمیان مذاکرات اسلام آباد میں ہو رہے ہیں، افغان حکومت اورافغان طالبان کے مذاکرات کا ابتدائی دورمکمل ہوگیا، فریقین نے قیام امن کے لئے کوششیں جاری رکھنے پراتفاق کیا ہے۔

افغانستان میں قیام امن کے لئے پاکستان نے ثالث کا کردار ادا کرتے ہوئے افغان حکومت اورافغان طالبان کے مذاکرات کی میزبانی کی، فریقین میں بات چیت مری میں ہوئی، جس میں امریکا اور نچین کے نمائندوں نے بھی شرکت کی۔ مذاکرات میں افغانستان میں قیام امن کے لئے طریقہ کار پرغورکیا گیا، فریقین کا کہنا تھا کہ امن کی بحالی کے لئے اعتماد سازی ضروری ہے۔

افغان حکومت اور افغان طالبان کے نامزد نمائندے مذاکرات میں شریک ہیں، افغانستان کے تین رکنی وفد کی قیادت نائب وزیر خارجہ حکمت کرزئی جبکہ افغان طالبان کے تین رکنی وفد کی قیادت ملا جلیل کر رہے ہیں،

برطانوی خبر ایجنسی کے مطابق طالبان کی جانب سے حاجی دین محمد، ملا خلیل، فرہاد اللہ اور ملا عباس جبکہ افغان حکومت کے نمائندے نائب وزیرِخارجہ حکمت خلیل کرزئی،حاجی دین محمد، اور پولیٹیکل افغان وفد شامل ہیں۔

ان مذاکرات کو چین کے شہر ارومچی میں گذشتہ دنوں منعقد ہونے والے مذاکرات کا تسلسل قرار دیا جا رہا ہے، پاکستانی دفتر خارجہ کے مطابق پاکستان افغانستان اور طالبان کی جانب سے مذاکرات کے عمل کو سراہتا ہے اور پاکستان ہمیشہ خطے میں امن کی کوششیں جاری رکھے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں