The news is by your side.

Advertisement

القائدہ برطانیہ میں حملوں کی منصوبہ بندی کررہی ہے، سربراہ ایم آئی 5

لندن: برطانوی خفیہ ایجنسی ایم آئی 5 کے سربراہ نےانکشاف کیا ہے کہ شام میں موجود القاعدہ کے عسکریت پسند مغرب بالخصوص برطانیہ پرحملوں کی منصوبہ بندی کررہے ہیں۔

فرانس میں مقامی جریدے کے دفتر پر حملے میں 12 افراد کے جاں بحق ہونے کے بعدایم آئی 5 کے ہیڈ کوارٹر میں گفتگو کرتے ہوئے برطانوی خفیہ ایجنسی کے سربراہ اینڈریو پارکر نے متنبہ کیا ہے کہ برطانیہ میں دہشت گرد حملے ہوسکتے ہیں اورٹرانسپورٹ یا تاریخی مقامات کو نشانہ بنایا جاسکتاہے۔

ایم آئی 5 کے سربراہ شاز و نادر ہی پبلک میں آتے ہیں آخری مرتبہ انہوں نے اکتوبر 2013 میں عوامی اجتماع میں تقریرکی تھی۔ ان کا کہنا تھا کہ شام میں مقیم القاعدہ کا ایک سرکردہ گروہ مغرب میں ایک ایسے حملے کی تیاری کررہا ہے جس کے نتیجے میں زیادہ سے زیادہ ہلاکتیں ہوں۔

ان کا کہنا تھا کہ اس منصوبے میں القاعدہ کے اہم رہنماء شامل ہیں اور اپنے مقاصد کے حصول کے لئے وہ ٹرانسپورٹ سسٹم یا تاریخی مقامات کو نشانہ بناسکتے ہیں جو کہ نسبتاً آسان ٹارگٹ ہیں۔

القاعدہ اس سے قبل 9/11 نامی حملے میں تین ہزار کے لگ بھگ جانیں لے چکی ہے جبکہ ان کے طرز عمل سے متاثر چند دہشت گرد برطانیہ میں خود کش حملے کرچکے ہیں جس کے نتیجے میں 52 افراد اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے تھے۔

القائدہ کےسربراہ اسامہ بن لادن کو امریکہ کی خصوصی فورسز نے 2011 میں ایک سپیشل آپریشن میں ہلاک کیا تھا جس کے بعد ایمن الظواہری نے القائدہ کی قیادت سنبھالی ہوئی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں