site
stats
صحت

امرود کا استعمال امراض قلب اور بلڈپریشر میں مفید

امردو کا استعمال انسانی جسم کو مختلف بیماریوں سے بچانے میں مفیدثابت ہوتا ہے۔

طبی ماہرین کے مطابق امرود میں موجود وٹامن سی وہ طاقتور اینٹی آکسیڈنٹ ہے، جو بیماریوں سے بچانے والے نظام کو طاقتور بناتا ہے اور کینسر و امراض قلب سے محفوظ رکھتا ہے۔

امرود میں نیاسین اور پوٹاشیم بھی وافر مقدار میں موجود ہوتے ہیں، جو بلڈ پریشر کو اعتدال میں رکھتے ہیں۔ امرود کے گودے اور اس کے بیجوں میں پیکٹن سے بھر پور اجزاء پائے جاتے ہیں، جن سے کولیسٹرول کی سطح کو کم رکھنے میں مدد ملتی ہے۔

امرود میں کئی طرح کے وٹامن ملتے ہیں، جو جسم کو صحت برقرار رکھنے میں مدد کرتے ہیں، امرود دل متعلق بیماریوں میں فائدہ پہنچاتا ہے، دل سے متعلق بیماریوں کے علاج میں امرود کارگر ہے۔

ریسرچ سے یہ نتیجہ اخذ کیا گیا ہے کہ امرود میں اینٹی آکسیڈنٹس کی خوبیاں دوسرے تمام پھلوں کی نسبت زیادہ پائی جاتی ہیں، اینٹی آکسیڈینٹس وہ غذائیت بخش اجزاء ہیں، جو خلیات کو تباہ ہونے سے بچاتے ہیں، خلیات کے تباہ ہونے پر جلد بڑھاپے کے اثرات کا شکار ہو جاتی ہے۔

جلد پر جھریاں اور شکنیں نمودار ہونے لگتی ہیں اور اسی وجہ سے سرطانی خلیات بھی بنتے ہیں، جو نہایت تباہ کن اور مضر اثرات کے حامل ہوتے ہیں۔

امرود کے بیج سے تیل بھی نکالا جاتا ہے، جس میں آیوڈین ہوتا ہے اور یہ طبی نقطہء نظر سے بہت مفید ہے، امرود میں وٹامن اے یا کیروٹین  کی مقدار کم ہوتی ہے لیکن دیگر معدنیات بشمول فاسفورس اور کیلشیم زیادہ ہوتے ہیں، امرود ایک ایسا پھل ہے، جو ذائقے کے اعتبار سے شاید پسندیدہ نہ ہو مگر خصوصیات کے اعتبار سے بے حد مفید ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top