The news is by your side.

Advertisement

امریکا کا حماس کی قید سے اسرائیلی فوجی کی رہائی کا مطالبہ

واشنگٹن : غزہ میں پندرہ سو سے زائد فلسطینی شہداء امریکی صدر باراک اوباما کو دکھائی نہ دیئے لیکن انہیں ایک اسرائیلی فوجی حماس کی قید میں نظر آگیا، جس کی مذمت کرتے ہوئے انھوں نے اسرائیلی فوجی کی رہائی کا مطالبہ کردیا ہے۔

جس کی لاٹھی اس کی بھینس، امریکی صدر نے حماس کی قید سے اسرائیلی فوجی کی رہائی کا مطالبہ کرکے اس محاورہ کرسچ ثابت کر دکھایا، باراک اوباما اسرائیلی پشت پناہی میں اس قدر اندھے ہوگئے کہ جنگ بندی کا معاہد ہ توڑنے کا الزام بھی حماس کے سرمنڈھ دیا، امریکی صدر کو ڈیرھ ہزار سے زائد نہتے فلسطینیوں کا خون اور غزہ میں اسرائیلی بمباری کے نتیجے میں ملبے کا ڈھیر بننے والی عمارتیں تو نظر نہ آئیں نظر آیا توصرف ایک اسرائیلی۔

ایک طرف امریکا اسرائیل کی اخلاقی حمایت جاری رکھے ہوئے تو دوسری طرف امریکی سینیٹ نےاسرائیلی میزائل ڈیفنس سسٹم کے اخراجات کیلئے دو سوپچیس ملین ڈالر کی متفقہ منظوری دے دی ہے، جو یقینا نہتے فلسطینیوں کے خون بہانے کیلئے ہی استعمال ہوگی۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں