The news is by your side.

Advertisement

انسداد دہشت گردی کی عدالت نے مولا نا صوفی محمد پر فرد جرم عائد کردی

پشاور: انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے کالعدم نفاذ شریعت محمدی کے امیر مولا نا صوفی محمد پر فرد جرم عائد کردی ہے۔

تفصیلات کے مطابق پشاور سینٹرل جیل میں لگائی گئی انسداد دہشت گردی کی عدالت نے کالعدم تحریک نفاذ شریعت محمدی کے سربراہ مولانا صوفی محمد پر غیر قانونی جلسہ کیس میں فرد جرم عائد کردی ہے ۔

صوفی محمد سمیت ان کے دو بیٹوں اور کمانڈر سفیر اللہ کو بھی اس مقدمے میں نامزدکیا گیا ہے۔ غیر قانونی جلسے، کار سرکار میں مداخلتاور دہشت گردی کے تین مقدمات پشاور سینٹرل جیل میں زیر سماعت ہیں۔

واضح رہے کہ صوفی محمد کا تعلق کالعدم نفاذ شریعت محمدی سے ہے صوفی محمدکے دو بیٹے اور کمانڈر سفیر اللہ بھی مقدمے میں نامزد ہیں

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں