The news is by your side.

Advertisement

اُوپن مارکیٹ میں ڈالرڈھائی ماہ بعد 104 روپے کا ہوگیا

کراچی: سٹےبازی،اضافی خریداری اور افواہوں نے اُوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالرکی قیمت ایک سو چار پر پہنچادی، اسٹیٹ بینک نےنوٹس لےلیا۔

 کرنسی مارکیٹ ڈیلرزکےمطابق جمعرات کو اُوپن مارکیٹ میں امریکی ڈالرڈھائی ماہ بعدپھر 104روپےکی سطح پردیکھاگیا،گذشتہ چار روز میں عوام کیلئےڈالر2 روپے مہنگا ہوچکا ہے۔

جبکہ مرکزی بینک کی مداخلت کےباوجود ایسا ہوا ہے، کرنسی ڈیلرزکاکہنا ہےکہ اُوپن مارکیٹ میں ڈالرکی قیمت بڑھنےکی وجہ حاجیوں کی جانب سے اضافی خریداری،سٹےبازی اور بجٹ افواہیں ہیں۔

ذرائع کےمطابق اسٹیٹ بینک نےمعاملےکا نوٹس لےلیاہےاور ہفتےکو منی چینجرکی نمائندہ تنظیم ای کیپ کے عہدیداران اورگورنر اسٹیٹ بینک میں ڈالر کوکنٹرول کرنےکےحوالے سےملاقات طے پاگئی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں