site
stats
اے آر وائی خصوصی

آج میجرراجہ عزیزبھٹی کا یوم شہادت منایا جارہا ہے

کراچی: ستمبر انیس سو پیسنٹھ کی پاک بھارت جنگ میں دشمن کا بہادری سے مقابلہ کرتے ہوئے پاک فوج کے نڈرجوان میجرراجہ عزیز بھٹی نے بارہ ستمبر کو جام شہادت نوش کیا۔

نشان حیدر کا اعزاز حاصل کرنے والے پاکستان کے سپوت شہید راجہ عزیز بھٹی اگست انیس سو اٹھائیس کو ہانگ کانگ میں پیدا ہوئے، راجہ عزیزبھٹی قیام پاکستان کے بعد اکیس جنوری انیس سو اڑتالیس کو پاکستان ملٹری اکیڈمی میں شامل ہوئے، انہوں نے بہترین کیڈٹ کے اعزاز کے علاوہ شمشیرِاعزازی اور نارمن گولڈ میڈل حاصل کیا اور ترقی کرتے کرتے انیس سو چھپن میں میجر بن گئے، چھ ستمبر کو جب بھارت حملہ آور ہوا تو ایک سو اڑتالیس گھنٹے تک مقابلہ کیا۔

بارہ ستمبر انیس سو پیسنٹھ کو بی آر بی نہرپرمورچے میں سینہ تان کر بیک وقت ٹینک سکواڈرن، پیدل  فوج اور توپ خانہ سے گولہ باری کی رہنمائی کرتے ہوئے، دشمن کو زبردست جانی نقصان پہنچاکراور  بے پناہ سامانِ حرب تباہ کرکے جام شہادت نوش کیا۔

نڈراوربہادرجوان میجرراجہ عزیز بھٹی صبح کے ساڑھے نو بجے دشمن کی نقل وحرکت کا دوربین سے مشاہدہ کرنیوالے ہی تھےکہ فولاد کا ایک گولہ انکے سینے کو چیرتا ہوا پار ہوگیا،ایثار کا مجسمہ، فرض شناس عظیم ہیرو نےاپنی جان وطن کی حرمت کے لئے نذردی۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top