The news is by your side.

Advertisement

آن لائن ریسرچ پیپر چوری ثابت، 45پروفیسرزاور اسسٹنٹ پروفیسرز نااہل قرار

اسلام آباد: ہائر ایجوکیشن نے آن لائن ریسرچ پیپرکی چوری ثابت ہونے پر پنتالیس پروفیسرز اور اسسٹنٹ پروفیسرز کو دو سال کیلئے نااہل قرار دے دیا ہیں۔

ہائر ایجوکیشن سے جاری نوٹی فیکیشن کے مطابق بارہ یونیورسٹیز کے پینتالیس ممبران نے اپنا ریسرچ پیپر آن لائن چوری کرکے جمع کرایا، جنہیں ریسرچ پیپر کی چوری ثابت ہونے پر دو سال کے لئے نااہل قرار دیا گیا ۔

چوری کے کا بھانڈہ اُس وقت پھوٹا جب سندھ کی یونیورسٹیز کےممبران نےاپنے تحقیقی مقالا جات تصدیق کیلئے ہائر ایجوکیشن کمیشن میں جمع کرائے، تصدیقی عمل کے دوران بارہ یونیورسٹیز کے پینتالیس ممبران پر علمی سرقہ ثابت ہوگیا۔

ہائر ایجوکیشن کےنوٹی فیکیشن کے مطابق پینتالیس ممبران نےچوری شدہ ریسرچ پیپرجمع کرائے تھے، نااہل قرار دئیے جانے والے پینتالیس فیکلٹی ممبران میں پروفیسرز اورایسوسی ایٹس پروفیسرزشامل ہیں۔

نااہل اساتذہ کا تعلق کراچی یونی ورسٹی، سندھ یونی ورسٹی، بینظیریونی ورسٹی ، زرعی یونیورسٹی ٹنڈوجام اور پیپلزیونی ورسٹی نوابشاہ سے ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں