The news is by your side.

Advertisement

ایران کے جوہری پروگرام پراسرائیل میں اختلافات

اسرائیل : ایران کے جوہری پروگرام سے متعلق اسرائیلی وزیرِاعظم نتن یاہو اور خفیہ ایجنسی موساد میں اختلافات سامنے آگئے ہیں، اسرائیلی وزیراعظم کو ایرانی صلاحیت پر اعتماد تھا جبکہ خفیہ ادارے اس سے انکاری تھے۔

غیرملکی خبرایجنسی نے منظرعام پر آنے والی ایک خفیہ کیبل کے حوالے سے بتایا کہ اسرائیلی وزیرِاعظم نتن یاہو کے برعکس خفیہ ایجنسی موساد نے اپنی رپورٹ میں کہا تھا کہ ایران میں ایسی کوئی سرگرمیاں نہیں ہو رہیں جو ایٹم بم بنانے کے لئے ضروری ہوتی ہیں۔

واضح رہے کہ دو ہزار بارہ میں اسرائیلی وزیرِاعظم نے اقوام متحدہ سے ایران کو روکنے کا مطالبہ کیا تھا کیوں کہ ان کا کہنا تھا کہ ایران ایک سال میں ایٹم بم بنا لے گا۔

اسرائیلی حکام نے ایران پر اسرائیلی وزیرِاعظم اورخفیہ ایجنسی میں اختلافات کی تصدیق کی۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں