ایم کیو ایم آج یوم سیاہ منارہی ہے -
The news is by your side.

Advertisement

ایم کیو ایم آج یوم سیاہ منارہی ہے

کراچی/حیدرآباد: ایم کیو ایم کی جانب سے پیپلز پارٹی رہنما اور قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ کے بیان کے خلاف ملک بھر میں یوم سیاہ منایا جارہا ہے۔ ٹرانسپورٹ معمول سے کم، کاروبار بند اور جامعات میں ہو نے والے تمام داخلہ ٹیسٹ بھی ملتوی کردیئے گئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ایم کیو ایم کی اعلٰی قیادت اور کارکنوں میں پی پی رہنما خورشید شاہ کے بیان کے خلاف غم و غصہ پایا جاتا ہے اور اس سلسے میں ایم کیو ایم رابطہ کمیٹی کی جانب سے رات گئے ایک اہم پریس کانفرنس کی گئی۔  جس میں ایم کیو ایم کی جانب سے خورشید شاہ کے بیان کے خلاف ملک بھر میں اتوار کے روز کو یوم سیاہ کے طور پر منانے کا اعلان کیا گیا۔ یوم سیاہ کے اعلان پر سندھ بھر کے مختلف شہروں میں کاروبار زندگی معطل ہو کر رہ گیا ہے۔

یوم سیاہ کے اعلان کے بعد کراچی سمیت سندھ بھر کے مختلف شہروں میں ٹرانسپورٹ معمول سے کم ہے جبکہ پیٹرول پمپس اور بازار بھی بند ہے۔ دوسری جانب ایم کیو ایم کی جانب سے یوم سیاہ کے اعلان پر عوام کو ضروریات زندگی کی چیزیں حاصل کرنے میں انتہائی دشوری کا سامانا کرنا پڑرہا ہے۔

ادھر جامعہ کراچی میں یوم سیاہ کی وجہ سے آج کے ہو نے والے تمام داخلہ ٹیسٹ بھی ملتوی کر دیئے گئے ہے۔

پیپلز پارٹی رہنما خورشید شاہ کی جانب سے لفظ مہاجر کو گالی قرار دینے پر پیپلز پارٹی اور ایم کیو ایم میں تنائو بڑھتا جا رہا ہے۔ رابطہ کمیٹی نے ایک بار پھر شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ خورشید شاہ کا بیان تضحیک آمیز ہے۔ خورشید شاہ نے چار بار مہاجر لفظ کو گالی قرار دیا۔ ایم کیو ایم رہنمائوں نے خورشید شاہ کے بیان کے خلاف پورے ملک میں یوم سیاہ منانے اور ٹرانسپورٹرز اور تاجروں سے کاروبار بند کرنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا تھا کہ یوم سیاہ کو کامیاب بنائیں۔

متحدہ رہنمائوں کا کہنا تھا کہ خورشید شاہ کے بیان کے خلاف عدالت میں درخواست دائر کرکے عدالت کو اختیار دیا ہے کہ وہ فیصلہ کرے کہ توہین رسالت کے مرتکب شخص کی کیا سزا ہونی چاہئے۔ جبکہ علمائے کرام سے بھی اپیل کی گئی ہے کہ وہ خورشید شاہ کے عمل اور الفاظ کی پرزور مذمت کریں۔

رات گئے ایم کیوایم کے قائد الطاف حسین نے ملک بھر میں یوم سیاہ منانے کی رابطہ کمیٹی کے فیصلے کی توثیق کرتے ہوئے ٹرانسپورٹ اور تاجر برادری سے آج (اتوار) ٹرانسپورٹ اور تجارتی مراکز بند رکھنے کی اپیل کی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں