The news is by your side.

Advertisement

این اے 125: سپریم کورٹ نے ٹریبونل کا فیصلہ معطل کردیا

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے این اے 125 اورپی پی 155 میں الیکشن ٹربیونل کی جانب سے ری پولنگ کا فیصلہ معطل کردیا۔

تفصیلات کے مطابق پیر کے روز جسٹس انورظہیر کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے خواجہ سعد رفیق کی جانب سے دائر کردہ درخواست کی سماعت کی ۔

الیکشن ٹربیونل نے تحریکِ انصاف کے حامد خان کی درخواست پر تحقیقات کرتے ہوئے این اے 125 اور پی پی  155میں ری پولنگ کرانے کا فیصلہ دیا تھا۔


الیکشن ٹربیونل نے خواجہ سعد رفیق کونااہل قراردےدیا


فیصلے کے نتیجے میں مسلم لیگ ن کے ایم این اے خواجہ سعد رفیق اپنی قومی اسمبلی کی نشست سے ہاتھ دھو بیٹھے تھے۔

سپریم کورٹ نے درخواست کی سماعت کرتے ہوئے الیکشن ٹربیونل کے فیصلے کو کالعدم قرار دیتے ہوئے ٹربیونل سے انتخابات کا تمام ترریکارڈ طلب کرلیا ہے۔

اس موقع پر خواجہ سعد رفیق نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میں الیکشن کے میدان میں جانا چاہتا ہوں لیکن مسلم لیگ ن کی قیادت نے فیصلہ کیا ہے دھاندلی کے مجرم کا تعین ہونا چاہئے، ٹربیونل کے فیصلے میں کسی کو باقاعدہ قصوروار نہیں ٹھہرایا گیا ہے۔

سپریم کورٹ کے اس فیصلے سے خواجہ سعد رفیق کی قومی اسمبلی کی رکنیت بحال ہوگئی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں