site
stats
بزنس

بجلی کی قیمت میں43پیسےفی یونٹ اضافہ

اسلام آباد: وزارتِ پانی وبجلی نے آئی ایم ایف کو رام کرنے کیلئے بجلی صارفین پر تینتالیس پیسے فی یونٹ کا اضافہ کر دیا ہے۔

ذرائع کے مطابق بجلی کے نرخ بڑھانے سے وزارتِ پانی وبجلی کو ایک سو سینتالیس ارب روپے کی آمدنی ہوگی اور آئی ایم ایف سے مذاکرات میں مدد ملے گی، یہ اضافہ آئندہ ماہ کے بل میں عوام سے وصول کیا جائے گا اور سولہ اکتوبر سے اس کا اطلاق ہوچکا ہے، اس اضافے کا اثر کے الیکٹرک کے علاوہ تمام ترسیلی کمپنیوں کے صارفین پر ہوگا۔

حکومت نےاضافہ سرچارج کی مد میں کیا ہے کیونکہ نیپرا نے بنیادی نرخوں میں اضافہ مسترد کردیا تھا، پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان اگست میں ہونے والے مذاکرات بے نتیجہ رہے تھے، جس کی وجہ سے ستمبر میں پچپن کروڑ ڈالر کی فراہمی معطل ہوگئی تھی۔

امریکا کی حمایت کے بعدآئی ایم ایف بات چیت پر رضامند ہوا تو آئی ایم ایف کو خوش کرنے کیلئے حکومت نے اس بار ترسیلی کمپنیوں کو بھی نہیں چھوڑا، ایسی ترسیلی کمپنیاں جن کی ریکوری لیٹ ہے، ان پر تیس پیسے فی یونٹ سرچارج لگایا گیا لیکن اس اضافے کا اطلاق صارفین پر نہیں ہوگا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top