بلدیاتی الیکشن: صوبوں کو قانون سازی کے لئے2 دن کی مہلت -
The news is by your side.

Advertisement

بلدیاتی الیکشن: صوبوں کو قانون سازی کے لئے2 دن کی مہلت

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے سندھ، پنجاب اور خیبر پختون خوا کو بلدیاتی الیکشن سے متعلق قانون سازی کے لئے جمعرات تک مہلت دے دی ہے، اعلیٰ عدالت نے کہا ہے کہ اسمبلیوں میں بل پیش نہ ہوئے تو تینوں وزرائے اعلیٰ کوطلب کریں گے۔

سپریم کورٹ میں بلدیاتی انتخابات کیس کی سماعت چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے کی، اعلیٰ عدالت نے دلائل سننے کے بعد صوبوں کے جواب مسترد کر دیئے اور سندھ، پنجاب، خیبر پختون خوا کی حکومتوں کو جمعرات تک بلدیاتی انتخابات کیلئے قانون سازی کرنے کا حکم دیا۔

چیف جسٹس نے کہا ہے کہ بلدیاتی انتخابات کے بل اسمبلیوں میں پیش کئے جائیں، قانون سازی نہ ہونے پر وزرائے اعلیٰ کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

چیف جسٹس نے ریمارکس میں کہا ہے کہ تین ماہ سے کہا جا رہا ہےکہ قانون سازی ہو رہی ہے لیکن اب تک کچھ نہیں ہوا، پانچ ماہ کی مہلت دی گئی تھی۔

سپریم کورٹ نے اٹارنی جنرل سے مستقل چیف الیکشن کمشنر کے تقرر کی تاریخ بھی فوری طور پر طلب کرلی ہے، چیف جسٹس نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ کا ایک جج قائم مقام چیف الیکشن کمشنر کی ذمے داریاں نبھا رہا ہے، جس سے عدالتی کام متاثر ہورہے ہیں، اٹھائیس اکتوبر تک نئے چیف الیکشن کمشنر کا تقرر ہوجانا چاہیئے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں