site
stats
بلوچستان

بلوچستان: اکبربگٹی کی 8ویں برسی، کئی اضلاع میں شٹرڈاؤن

بلوچستان: سردار نواب اکبربگٹی کی آج آٹھویں برسی منائی جارہی ہے، برسی کے موقع پر بلوچ ریپبلکن پارٹی اور جمہوری وطن پارٹی کی کال پر کئی اضلاع میں مکمل شٹرڈاؤن ہڑتال جاری ہے، شہر میں چھوٹے بڑے کاروباری مراکز بند رہے اور جبکہ پہیہ جام کی وجہ سے سڑکیں سنسان پڑی ہیں جبکہ وکلاء بھی آج عدالتی کارروائیوں سے بائیکاٹ پر ہیں

چھبیس اگست کی تاریخ بلوچستان میں ہڑتال اور سوگ کی کیفیت ساتھ لاتا ہے، اس دن سابق وزیراعلیٰ و گورنر بلوچستان نواب محمد اکبر بگٹی کے پیروکار اور ان کے نظریئے کے حامی ان کی برسی پر شہر میں پہیہ جام اور کاروباری مراکز بند کرکے سوگ مناتے ہیں۔

سردار نواب اکبربگٹی کی آٹھویں برسی کے موقع  پر جمہوری وطن پارٹی کی جانب سے ہڑتال کی کال دی گئی تھی، جس پر قلات ، خضدار، دالبدین ، گوادر ،ڈیرہ بگٹی سمیت بلوچوں کی اکثریتی علاقوں میں شٹرڈاﺅن ہڑتال جاری ہے اور ریلیاں نکالی جارہی ہیں۔

بیشتر اضلاع میں کاروباری اور تجارتی مراکز سرکاری نجی اداروں کے علاوہ بعض اضلاع میں سکول بھی بند ہیں جبکہ ٹریفک بھی معمول سے انتہائی کم ہے، کوئٹہ میں پرنس روڈ جناح روڈ سریاب روڈ سمیت مختلف علاقوں میں کاروبار زندگی مکمل طور پر بند ہے

اسی طرح بلوچستان بار ایسوسی ایشن کی کال پر آج کوئٹہ سمیت صوبے بھر میں وکلاء آج عدالتوں میں پیش نہیں ہورہے ، جے ڈبلیو پی کے سربراہ نوابزادہ طلال اکبر بگٹی نے بگٹی ہاؤس پر سیاہ جھنڈا لہرایا جبکہ کارکنوں نے بازوؤں پرسیاہ پٹھیاں باندھی ہیں۔

مختلف اضلاع میں قرآن خوانی کے خصوصی انتظامات کئے گئے ہیں، چھبیس اگست دوہزار چھ کو ایک آپریشن کے دوران نواب محمد اکبر بگٹی کو شہید کیا گیا تھا، جس کے بعد بلوچستان میں مزاحمت نے زور پکڑلیا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top