بلوچستان میں بجلی کا بحران، کاروبار زندگی مفلوج، زراعت تباہ -
The news is by your side.

Advertisement

بلوچستان میں بجلی کا بحران، کاروبار زندگی مفلوج، زراعت تباہ

کوئٹہ : ملک میں بجلی کی لوڈشیڈنگ سے سب سے زیادہ متاثرہ صوبہ بلوچستان کو قرار دیا جائے تو بے جا نہ ہوگا،ہفتہ اور اتوار کی درمیانی شب طویل بریک ڈاﺅن کے باعث ملک بھر میں بجلی معطل رہی تاہم گزشتہ کئی ماہ سے بلوچستان کے دیہی اضلاع میں لوگ رات اور دن اسی طرح بغیر بجلی کے ہی گزارتے ہیں۔

جس سے زراعت کا شعبہ تباہی کے دہانے پہنچ گیا ہے ،صوبے کے ضلعی ہیڈ کوارٹرز میں بجلی کی اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا دورانیہ14سے 18گھنٹے جبکہ صوبائی دارالحکومت میں 4سے 8گھنٹے بجلی بند رہتی ہے تاہم بجلی کے ٹاورز گرائے جانے اور دیگر وجوہات کے باعث غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ نے لوگوں کو اذیت میں مبتلا کردیا ہے۔

بریک ڈاﺅن کے بعد بلوچستان میں بجلی بحال تو ہوگئی تاہم چھتر میں تباہ شدہ ٹاورز کی مرمت کا کام مکمل ہوا ہی نہیں تھا کہ گزشتہ رات ضلع نصیر آباد کے علاقے نوتال میں بھی 220کے وی کے مزید دو ٹاوزر دھماکہ خیز مواد سے اڑا دئیے، جس سے کوئٹہ سمیت بلوچستان کے بیشتر اضلاع میں بجلی کی لوڈشیڈنگ میں مزید اضافہ ہوگیا ہے جو عوام کیلئے کسی اذیت سے کم نہیں۔‘

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں