بنگلا دیشی اپوزیشن لیڈرخالدہ ضیا نظربند، احتجاج کے دوران 2 افراد ہلاک -
The news is by your side.

Advertisement

بنگلا دیشی اپوزیشن لیڈرخالدہ ضیا نظربند، احتجاج کے دوران 2 افراد ہلاک

ڈھاکا: بنگلا دیش میں قائد حزب اختلاف خالدہ ضیا دوسرے روز بھی اپنے دفتر میں نظر بند ہیں دوسری جانب ملک بھر ہونے والے حکومت مخالف مظاہروں کے دوران 2 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق بنگلا دیش میں متنازعہ انتخابات کے نتیجے میں موجودہ حکومت کی تشکیل کو ایک برس مکمل ہونے پر اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے احتجاج کیا جارہا ہے ، ملک کے تمام بڑے شہروں میں کاروبار زندگی معطل ہیں جب کہ سیاسی و مذہبی جماعتوں کے قائدین کی جانب سے احتجاج کا سلسلہ جاری ہے۔

کئی شہروں میں مظاہروں کے دوران حکمران اور اپوزیشن جماعتوں کے کارکنوں میں تصادم بھی ہوا ہے۔   ناتورے نامی شہر میں  موٹر سائیکل سواروں نے حکومت مخالف مظاہروں پر اندھادھند فائرنگ کرکے 2 افراد کو ہلاک کردیا، ہلاک ہونے والے دونوں افراد کا تعلق حزب اختلاف کی سب سے بڑی جماعت بنگلہ دیش نیشنلسٹ پارٹی سے ہے۔

دوسری جانب قائد حزب اختلاف خالدہ ضیا دوسرے روز بھی اپنے دفتر میں نظر بند ہیں، پولیس کا کہنا ہے کہ اس پابندی کا مقصد پر تشدد مظاہروں کی روک تھام کرنا ہے، واضح رہے کہ خالدہ ضیاء کی بی این پی اور ان کی اتحادی جماعتوں نے گزشتہ برس ہونے والے عام انتخابات میں دھاندلی کے خدشے کے پیش نظر مکمل طور پر بائیکاٹ کردیا تھا جس کے باعث شیخ حسینہ واجد بلا مقابلہ ملک کی وزیراعظم منتخب ہو گئی تھیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں