site
stats
عالمی خبریں

بنگلہ دیش میں بھگدڑ سے 10 ہندو یاتری ہلاک، 50 زخمی

ڈھاکہ : ہندؤں کے مذہبئی تہوارکے موقع پربھگدڑ کے نتیجے میں کم ازکم 10 افراد جاں بحق جبکہ درجنوں زخمی ہوگئے ہیں۔

بھگدڑ کا واقعہ ڈھاکہ میں دریائے برہما پترا کے نزدیک پیش آیا جہاں لاکھوں ہندو افراد اپنے سالانہ تہوار کی مذہبی رسومات ادا کرنے کے لئے موجود تھے۔

پولیس انسپکٹر ناصراحمد کے مطابق کم سے کم 7 خواتین اور 3 مردوں کی موت کی تصدیق ہوچکی ہے۔

انہوں نے اے ایف پی سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ہم واقعے کی اصل وجہ تک پہنچنے کی کوشش کررہے ہیں لیکن لگتا یہ ہے کہ یہ واقعہ یاتریوں کی معمول سے زیادہ تعداد کے باعث پیش آیا۔

انہوں نے مزید بتایا کہ بھگدڑمیں ہزاروں افراد شامل تھے کیونکہ واقعے کے ایک گھنٹے بعد بھی سڑک پر ہزاروں جوتے دیکھے جاسکتے ہیں۔

عینی شاہدین کے مطابق کم سے کم 50 افراد استمی سنان نامی اس سالانہ مذہبی تہوار میں زخمی ہوئے ہیں۔


عمومی طور پر اس تہوار میں دس لاکھ کے قریب افراد بنگلہ دیش اوردیگر ممالک سے شریک ہوتے ہیں لیکن ضلعی منتظم انیس الرحمن کہ مطابق اس سال بنگلہ دیش کے قومی دن کی تعطیلات ہونے کے سبب تہوار میں شرکاء کی تعداد معمول سے کہیں زیادہ تھی۔

بنگلہ دیش کی آبادی 16 کروڑ کے لگ بھگ ہے اور اکثریت مسلم ہے جبکہ ہندو کل آبادی کا 10 حصہ ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top