بھارت میں ایک اورچرچ پرحملہ -
The news is by your side.

Advertisement

بھارت میں ایک اورچرچ پرحملہ

نئی دہلی: سیکیولر بھارت کے انتہا پسند چہرے کے ایک اور رخ اس وقت سامنے آیا جب انتہا پسند ہندؤں نے ایک چرچ کو اپنے غم وغصے کا نشانہ بناڈالا۔

بھارتی پولیس کے مطابق انہوں نے وسطی بھارت میں چرچ پرہونے والے حملے میں ملوث افراد میں سے چھ کو گرفتارکرلیا ہے۔

مدھیہ پردیش میں ہونے والے چرچ حملے کی سی سی ٹی وی فوٹیج میں حملہ آوروں کو چرچ کی املاک کو نقصان پہچاتے ہوئے صاف دیکھا جاسکتا ہے۔

حملہ آوروں کا تعلق ہندو دھرما سینا سے ہے اور ان کا موقف ہے کہ متاثرہ چرچ نے 200 کے لگ بھگ مقامی افراد کو عیسائی بنایا ہے، مذہبی گروہ نے چرچ کی املاک کو نقصان پہنچانے کے الزام سے انکارکردیا ہے۔

ریاست کےایک سینئر پولیس افسرنے فرانسیسی خبررساں ادارے کو تصدیق کی کہ اس معاملے میں چھ گرفتاریاں ہوچکی ہیں جبکہ مزید گرفتاریاں بھی ہوسکتی ہیں۔

تجزیہ نگاروں کی جانب سے کہا جارہا ہے کہ بھارت میں گزشتہ سال ہندو قوم پرست پارٹی بی جے پی کے اقتدارمیں آنے سے ہندو شدت پسند گروہوں کو تقویت ملی ہے۔

گزشتہ کچھ مہینوں سے بھارت میں گرجا گھروں اور مشنری اسکولوں میں حملوں میں تیزی آگئی ہے، گزشتہ دنوں ایک نن کو بھی بھارت میں جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا تھا۔

church-protest

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں