The news is by your side.

Advertisement

بھارت پاکستان سے برابری کی سطح پر بات کرے، رحمان ملک

لاہور : سابق وفاقی وزیر داخلہ رحمان ملک نے کہا ہے کہ وزارت خارجہ کو افغان صدر کی پاکستان کی صوبائی سیاسی قیادت سے ملاقاتوں کا نوٹس لینا چاہیے۔افغان حکومت بین الاقوامی سفارتی قدروں کا احترام کرتے ہوئے وفاقی حکومت سے رابطہ رکھے۔

لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے رحمان ملک نے کہا کہ بھارت پاکستان کو ایٹمی قوت تسلیم کرتے ہوئے برابری کی سطح پر بات کرے مودی کا رویہ اب بھی اپوزیشن لیڈر جیسا ہی ہے ۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان میں داعش کی طرز پر دہشت گردی پھیلائی جارہی ہے اہل تشیع کو قتل کیا جاتا ہے تاکہ شیعہ سنی اختلافات کو بڑھایا جائے، خدشہ ہے کہ آئندہ سنی علماء اور مدارس پر بھی حملے ہوسکتے ہیں۔

رحمان ملک کا کہنا تھا کہ مولانا فضل الرحمان کے پارلیمنٹ سے پا س ہونے والی اکیسویں آئینی ترمیم پر تحفظات دور کرنا ضروری ہیں،پیپلز پارٹی کے دور حکومت میں مدرسہ اصلاحات کے لیے پانچوں وفاق المدارس اور حکومت کے درمیان معاہدہ طے پایا تھا، جسے پارلیمنٹ سے پاس کروانا چاہیئے۔

ایک سوال کے جواب میں رحمان ملک نے کہا کہ بلاول بھٹو اور آصف زرداری کے درمیان اختلافات نہیں، انھوں نے کہا کہ عمران خان نے شادی کرکے اچھا اقدام کیا امید ہے کہ اب دھرنے نہیں ہوں گے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں