site
stats
عالمی خبریں

بھارت کشمیر میں دہشتگردوں کو فنڈ جاری کرتا ہے، را کے سابق چیف کا انکشاف

بھارتی خفیہ ایجنسی را کے سابق چیف نے انکشاف کیا ہےکہ بھارتی ایجنسی کشمیر میں کئی اہم سیاسی رہنماوں کو پاکستانی ایجنسی آئی ایس آئی سے مقابلہ کرنے کے لئے فنڈ جاری کرتی ہے۔

بھارتی ٹی وی چینل کو انٹرویو میں وضاحت کرتے ہوئے بتایاکہ بھارتی حکومت اکثر فضائی کرایوں، طبی علاج اور عمومی دیکھ بھال کے لئے سید علی شاہ گیلانی جیسے سخت علیحدگی پسندوں کی معاونت کرتی ہے۔

انکشافات کرتے ہوئے را کے سابق چیف کا کہنا تھا کہ بھارت دہشتگردوں اور علیحدگی پسندوں کے ساتھ رابطے میں تھا۔

انہوں نے کہا کہ بھارت کا انتہائی مطلوب دہشتگرد سید صلح الدین میرے ساتھ رابطے میں تھا اور پاکستان چھوڑ کر بھارت آنا چاہتا تھا۔

مزید انہوں نے بتایا کہ بھارتی کشمیر میں دفاع کے شدت پسند خریدے گئے جبکہ یہ بتایا گیا تھا کہ عسکریت پسند اور علیحدگی پسند دونوں آئی ایس آئی کو معاملات میں اُلجھا کے رکھیں گے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق را کے سابق چیف اے ایس دلت کا کہنا تھا کہ امرتسر ائیرپورٹ پر اترنے والے طیارے کو اغواء سے بچانے کے لئے کرائسس مینجمنٹ گروپ مکمل طور پر ناکام رہا۔

انھوں نے کہا کہ بھارتی حکام گھبراہٹ کا شکار ہوگئے اور کوئی بھی طیارے کے بارے میں فیصلہ کرنے پر تیار نہیں تھا، بھارتی حکام کی نااہلی کے باعث ہائی جیکرزطیارے کوآرام سے قندھار لے جانے میں کامیاب ہوگئے۔

دلت نے یہ انکشاف بھی کیا کہ بھارت نے طیارے کے ایک سوپچپن مسافروں کی رہائی کے بدلے تین دہشت گردوں کو رہا کرنے پرآمادگی ظاہرکی تھی۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top