The news is by your side.

Advertisement

بھارت گندم کو سیاسی ہتھیار کے طورپراستعمال کرنا چاہتا ہے،مرتضیٰ مغل

اسلام آباد: پاکستان اکانومی واچ کے صدر ڈاکٹر مرتضیٰ مغل نے کہا ہے کہ بھارتی گندم کو افغانستان کی منڈیوں تک رسائی دینے سے پاکستان کی صنعت و زراعت اور دیگر شعبے بری طرح متاثر ہو سکتے ہیں۔

بھارت پاکستان سے ٹرانزٹ ٹریڈ کی سہولت حاصل کر کے اپنی سستی، غیر معیاری اور انسانی صحت کے لئے مضرگندم افغانستان بھیجنا چاہتا ہے جسکی اجازت دینا ملکی مفاد کے خلاف ہے کیونکہ اس میںموجود مخصوص بیماریوں کے کیڑے پاکستان کی زراعت کو برباد کر سکتے ہیں۔

ڈاکٹر مرتضیٰ مغل نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ افغان منڈی میںدونوں ممالک کی گندم کا کھلا مقابلہ نہیں ہوگابلکہ بھارت کی جانب سے برامدکنندگان کو دی جانے والی خفیہ سبسڈی کے نتیجہ میں پاکستان افغانستان کی منڈی سے محروم اور پاکستان برامدکنندگان کے کروڑوں روپے کے بقایا جات ہمیشہ کے لئے پھنس سکتے ہیں ۔

جبکہ بہت سی فلور ملز بند ہو کر بے روزگار اور حکومت کی آمدنی میں کمی کا سبب بنیں گی، ڈاکٹر مغل نے کہا کہ بھارت گندم کو پاکستان کے خلاف سیاسی ہتھیار کے طور پر استعمال کرنے کا خواہاں ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں