site
stats
سندھ

بھوک سے 3 معصوم تھری بچے جاں بحق ، تعداد 193 ہوگئی

تھرپارکر : صحرائے تھر میں ہر گزرتے روز کے ساتھ موت کے سائے گہرے ہوتے جارہے ہیں ، آج بھی سخت سردی اور بھوک کے باعث تین معصوم کلیاں مرجھاں گئیں۔

دو ماہ میں جاں بحق بچوں کی تعداد ایک سو ترانوے تک جا پہنچی ۔تھر کے صحرا سے موت کے سائے چھٹ نہ سکے ۔ ہر گزرتا دن تھر واسیوں کے لئے پہلے سے مشکل ہوتا جارہا ہے ۔

سائیں سرکار کے دعوے ہزار لیکن سخت سردی، غذائی قلت اورصحت کی سہولیات کا فقدان بچوں کے لئے ہر روز موت کے پروانے لارہا ہے۔

آج بھی تین بچے زندگی کا سفر چھوڑ گئے۔ ڈیپلو کے گاؤں لگھدیوں میں ایک معصوم دم توڑ گیا۔ اسلام کوٹ میں بھی ایک ننھا زندگی کی جنگ ہار گیا۔

مٹھی کے گاؤں امریو میں ایک بچہ موت کو شکست نہ دے سکااور اس کے سامنے کھٹنے ٹیک دئیے۔ حکومتی دعوؤں کے برعکس تھر واسیوں کو ایسے مسیحا کا انتظار ہے جو ان کو بنیادی سہولیات فراہم کرکے ان کی زندگی بدل دے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top