The news is by your side.

Advertisement

تحریکِ آزادی کی بانی رہنما ’بی اماں‘کو بچھڑے 90 سال بیت گئے

کراچی: آج تحریکِ پاکستان کی بانی اورمشہور و معروف خاتون رہنماء بی اماں کی نوے ویں برسی ہے آپ نے13 نومبر1924کو جدو جہدِ آزادی کے لئےسخت نامساعد حالات کا سامان کرتے ہوئے وفات پائی۔

بی اماں کا اصل نام آبادی بیگم تھااور وہ 1850ء میں پیدا ہوئی تھیں۔ ان کی شادی رام پور کی ایک معزز شخصیت عبدالعلی خان سے ہوئی۔ ان کے دو فرزند مولانا شوکت علی اور مولانامحمد علی جوہر تحریک پاکستان کے انتہائی اہم کردار تھے ، دونوں بھائی علی برادران کے نام سے مشہور ہوئے۔

سن1921ء میں جب علی برادران کو قید و بند کی صعوبت کا سامنا کرنا پڑا تو بی اماں نے یہ زمانہ بڑے صبر اور حوصلے کے ساتھ گزارا۔ وہ ہندوستان کے گوشے گوشے میں گئیں اور اپنی تحریروں سے مسلمانوں کا جذبہ بلند کرتی رہیں۔ اسی زمانے میں بی اماں کی شخصیت پر لکھی جانے والی اقبال سہارن پوری کی ایک نظم ’صدائے خاتون‘ہندوستان کی مقبول ترین نظم بن گئی جس کا ایک مصرعہ کچھ یوں تھا کہ

بولی اماں محمد علی کی، جان بیٹا خلافت پہ دے دیا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں