The news is by your side.

Advertisement

تنظیمات اہلسنت کے دس رہنماؤں سمیت پینتالیس کارکنوں کے کیخلاف مقدمہ

فیصل آباد : تنظیمات اہلسنت کے دس رہنماؤں سمیت پینتالیس کارکنوں کے کیخلاف مقدمہ درج کر لیا گیا۔ مقدمہ لاؤڈ اسپیکرپر پابندی کیخلاف احتجاج کے دوران دکانیں زبردستی بند کرانے پر درج کیا گیا .

ایف آئی آر میں صاحبزادہ حامد رضا،بخش الہیٰ،عابد قمر نورانی سمیت دس افراد کو نامزد کیا گیا ہے، تھا نہ کوتوالی میں درج مقدمے میں چھ دفعات لگائی گئیں ہیں۔

اس سے قبل فیصل آبادمیں سنی اتحاد کونسل کےاحتجاج کے دوران دکانیں بند کرانے پرمظاہرین اور تاجروں میں ہاتھا پائی ہوگئی۔

مظاہرین نے ٹائرجلا کر شہر کی اہم شاہراوں پردھرنے دیئے۔لاؤڈ اسپیکرایکٹ کی خلاف ورزی پر علما کی گرفتاری سنی اتحاد کونسل کےکارکنان کوسڑکوں پرلےآئی

۔شٹر ڈاؤن ہڑتال کی کال پر مظاہرین نے ڈنڈے اٹھالئے اور سڑکوں پر جلاؤ گھیراؤ کیا،احتجاج کے دوران مظاہرین نے زبردستی دکانیں بند کرانے کی کوشش کی جس پر تاجر اور مظاہرین گتھم گتھا ہوگئے.

نقاب پوش ڈنڈہ بردار احتجاج کے دوران دکانیں بند کراتے رہے اور سڑکوں پر ٹائر نذر آتش کرتے رہے، تاجروں کا کہنا ہے توڑ پھوڑ کے ذریعے مارکیٹ بند کرانے کے بجائے ہمیں بلا کر اپیل کی جائے تو ہڑتال میں تعاون کریں گے .

جبکہ مظاہرین کا کہنا تھا کہ احتجاج پُر امن ہے علما کو رہا کیا جائے علما کی گرفتاری کیخلاف سنی اتحاد کونسل کے ساتھ اہل سنت کی بیالیس تنظیمات بھی احتجاج میں شریک ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں