تھرپارکر:ایک مرتبہ پھر قحط سالی کے باعث،1بچی جاں بحق -
The news is by your side.

Advertisement

تھرپارکر:ایک مرتبہ پھر قحط سالی کے باعث،1بچی جاں بحق

تھرپارکر: ایک مرتبہ پھر قحط سالی کے باعث موت کا رقص شروع ہوگیا، تھر میں تعینات ڈاکٹرز بھی چار ماہ سے تنخواہ سے محروم ہیں۔

تھرمیں قحط سالی ایک مرتبہ پھرننھی کلیوں کونگلنے لگی، غذائی قلت کے باعث بیماری میں مبتلا مٹھی کے اسپتال میں ایک اور بچی جاں بحق ہوگئی، اسے سندھ حکومت کی نااہلی کہیے یا لاپروائی تھر کیلئے بھرتی کیے گئے اڑسٹھ ڈاکٹرز کوچارہ ماہ سے تنخواہ نہیں ملی۔

صوبائی حکومت نے اسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کرنے کااعلان تو کردیا ہے لیکن اسپتال کاعملہ بیمار بچوں کی نگہداشت کے بجائے انہیں ایک ہی دن میں صحت مند قرار دے کرفارغ کردیتا ہے، جب کہ کچھ بچوں کی حالت تشویشناک کہہ کرحیدرآباد منتقل کردیا جاتا ہے۔

مقامی افراد کا کہنا ہے کہ صورتحال پر بروقت قابو نہ پایا گیا توصورتحال سنگین ہوسکتی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں