تھر: غذائی قلت سے آج بھی 2نومولود بچے دم توڑ گئے -
The news is by your side.

Advertisement

تھر: غذائی قلت سے آج بھی 2نومولود بچے دم توڑ گئے

تھر: غذائی قلت سے صورتحال مزید بگڑ گئی ہے، اکتالیس دنوں میں اڑتالیس بچے زندگی کی جنگ ہار گئے ہیں ، خوراک کی عدم دستیابی اورفوری طبی امداد نہ ملنے کی وجہ سے آج بھی دو نومولود بچے دم توڑ گئے۔

صحرائے تھر میں قحط سالی نے زندگی مشکل کردی ہے، بھوک سے بلکتے تھری باشندے آج بھی غذائی قلت کا شکار ہیں، اکتالیس دن میں اڑتالیس بچے موت کی وادی میں جاسوئے، آج بھی تھر کی تحصیل ڈیپلو کے نواحی گائوں ورنائی میں دو نومولود دم توڑ گئے۔

یکم نومبر سے اب تک گیارہ بچے دم توڑ چکے ہیں، ان بچوں کو ابتدائی طبی امدام ملنے میں تاخیر ہوجاتی ہے تو کہیں دوائیاں زائد المعیاد ہونے کی بنیاد پر زندگی بچانا مشکل ہوجاتی ہے، سول اسپتال مٹھی میں ترپن بچے زیرِ علاج ہیں جبکہ تھر کے ضلع تھر کے مختلف علاقوں ڈیپلو ، اسلام کوٹ ، کلوہی ، چھاچھرو اور ننگر پارکر سمیت سرکاری اور نجی اسپتالوں میں بچے زیرِ علاج ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں