site
stats
پاکستان

جامعہ کراچی کے پروفیسر کا قتل، تدریسی عمل دوسرے روز بھی معطل

کراچی : جامعہ کراچی کے اسسٹنٹ پروفیسرکے قتل کے خلاف یونیورسٹی میں تدریسی عمل آج بھی معطل ہے۔

روشنیوں کے شہر کراچی کو علم وادب کی نامور شخصیات سے محروم کرنے کا سلسلہ جاری ہے، گزشتہ روز جامعہ کراچی کے شعبہ ابلاغِ عامہ سے وابستہ اسسٹنٹ پروفیسرسید وحیدالرحمان المعروف یاسر رضوی کے بہیمانہ قتل کے بعد جامعہ کی فضا سوگ میں ڈوبی ہوئی ہے۔

جہاں علم کی لو جلتی تھی وہاں آج دُکھ کے گہرے سائے ہیں۔

مرحوم کو گزشتہ شب آہوں اورسسکیوں میں یاسینِ آباد قبرستان میں سُپردِخاک کردیا گیا،علم کی روشن شمع بجھنے پر ہر آنکھ اشکبار ہے، ہر دل درد سے بوجھل ہے اور سوگ میں جامعہ کراچی میں تدریسی عمل آج دوسرے روز بھی معطل ہے، آج بھی جامعہ کراچی میں احتجاج کیا جائے گا۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز کراچی کے علاقے فیڈرل بی ایریا بلاک سولہ میں نامعلوم افراد نے کار پر فائرنگ کردی، جس کے نتیجے میں جامعہ کراچی کے اسسٹنٹ پروفیسر وحید الرحمان جاں بحق ہوگئے۔

جامعہ کراچی کے اسسٹنٹ پروفیسر کو دستگیر کے علاقے میں رہائش گاہ سے یونیورسٹی جاتے ہوئے دہشتگردوں نے نشانہ بنایا، ڈاکٹر وحیدالرحمان کو سر اور سینے میں پانچ گولیاں لگیں، جس سے وہ موقع پر ہی دم توڑ گئے ۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top