جوڈیشل کمیشن پرحکومت کی نیت پرکل بھی شک تھااورآج بھی ہے، شاہ محمود قریشی -
The news is by your side.

Advertisement

جوڈیشل کمیشن پرحکومت کی نیت پرکل بھی شک تھااورآج بھی ہے، شاہ محمود قریشی

اسلام آباد: تحریک انصاف کے رہنما شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ جوڈیشل کمیشن پرحکومت کی نیت پرکل بھی شک تھااورآج بھی ہے۔

دھرنا کنونشن سے خطاب میں شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ پاکستان کی عوام ان حکمران اسے تنگ آچکی ہے اور پاکستان کی عوام دھرنے میں اس لیے نہیں آئی کہ ان کی قومی یاصوبائی اسمبلی میں سیٹیں ماری گئی تھیں بلکہ وہ اس لیے آئے تھے کیونکہ ان کے دل میں در د تھا اور عوام حکمرانوں کے کیخلاف اٹھی جنہوںنے ملک کو 68سال تک پاکستان پر حکومت کی ان کیخلاف اٹھے اور عمران خان کا ہاتھ تھاما۔

ان کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف نے دھرنا ختم نہیں کیا تھا بس ایک موڑ آیا تھا جو کہ 16دسمبر کا واقعہ تھا جس کی وجہ سے قوم آج تک سوگ میں مبتلا ہے،اس وقت انہوںنے ذاتی مفاد نہیں بلکہ قومی مفاد کے لیے حکومت کا ساتھ دیا تاکہ دہشت گردوں کو ان منطقی انجام تک پہنچایا جا سکے ۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ دھرنے میں ملک بھر سے لوگ آئے، صرف تحریک انصاف دھاندلی کا شکار نہیں ہوئی، 126 دن کا دھرنا کارکنوں نے ممکن بنایا، شفاف انتخابات قوم کی خواہش اور مطالبہ ہے، قوم نئے جمہوری سورج کو طلوع ہوتا دیکھنا چاہتی ہے۔

دھرنا کنوینشن سے خطاب کر تے ہو ئے شیخ رشید کا کہنا تھا کہ ملک اور حکومت دونوں ساتھ نہیں چل سکتے،پیٹرول بحران پر شاہد خاقان کو برطرف کرنا چاہیے تھا،عمران خان ہی ملک کو بچا سکتا ہے، حکومت نا اہل ہے اور وہ عوام کے مسائل حل نہیں کر سکتی ۔ ان کا مزید کہنا تھاکہ پٹرول کے بحران پر 4 افسروں سے استعفی لینا کافی نہیں ہو گا ۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں