حکمرانوں کو خون کا بدلہ دینا ہوگا، طاہرالقادری -
The news is by your side.

Advertisement

حکمرانوں کو خون کا بدلہ دینا ہوگا، طاہرالقادری

اسلام آباد: ڈاکٹر طاہر القادری نے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکمرانوں کو خون کا بدلہ دینا ہوگا، حکومت نےمحاصرہ کررکھا ہے، کوئی گاڑی اندر نہیں آنے دی جارہی۔

طاہرالقادری  نے کہا کہ حکومت دھوپ سے بچنےکیلئے شامیانے اندر نہیں آنے دے رہی،کہا جارہا ہے کہ مارگلہ روڈ پر جاؤ اپنے شامیانے کے ٹرک چھڑاکرلے آؤ ۔انھوں نے کہا کہ آئی جی اسلام آباد آفتاب چیمہ نے انقلاب مارچ اور آزادی مارچ کے شرکاء پر طاقت کے استعمال سے انکار کیا اور گولی نہیں چلائی ،اس لئے حکومت نے انہیں عہدے سے ہٹا دیا گیا۔

 ڈاکٹر طاہر القادری کا کہنا تھا کہ انہیں علم ہے کہ دھرنے میں کئی لوگ بھوک اور پیاس سے نڈھال ہیں، پاکستان عوامی تحریک سمیت کئی جماعتیں اور سول سوسائٹی ان کے کھانا لاتی ہے لیکن کنٹینروں کی وجہ سے وہ یہاں تک آنہیں سکتا۔

پاکستان عوامی تحریک یا تحریک انصاف کے کارکنوں نے مسلم لیگ ن کے رہنماؤں پر حملہ نہیں کیا لیکن شاہ محمود قریشی کےگھر پر مسلم لیگ ن کے کارکنوں نے حملہ کیا ۔

طاہر القادری  نے کہا کہ نواز شریف اور شہباز شریف درندے ہیں، حکمرانوں کو ایک ایک قتل کا بدلہ دینا ہوگا،  خون بہانا ہے تو سب سے پہلےمجھےگولی مارو۔

ڈاکٹر طاہر اقادری کا کہنا تھا کہ کہ انہیں اطلاع ملی ہیں کہ دھرنے کے شرکا کو ملنے والے سرکاری پانی میں ایسے کیمیائی مادے شامل کئے جائیں گے جس سے وہ مختلف امراض میں مبتلا ہوجائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ 65 برس سے اس ملک کے عوام نے ظلم برداشت کیا ہے کچھ دنوں میں انقلاب نہیں آتا۔  وہ اپنے لوگوں کے لئے خود گولی کھالیں گے لیکن پیچھے نہیں ہٹیں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں