حکومت اورتحریک انصاف کے درمیان عدالتی کمیشن پردس نکات پراتفاق -
The news is by your side.

Advertisement

حکومت اورتحریک انصاف کے درمیان عدالتی کمیشن پردس نکات پراتفاق

اسلام آباد: حکومت اور تحریک انصاف کے درمیان عدالتی کمیشن کےحوالےسے دس نکات پر اتفاق ہوگیا۔

عدالتی کمیشن حکومت کی درخواست پرسپریم کورٹ تشکیل دے گا،میشن سپریم کورٹ کے تین ججز پر مشتمل ہوگا جو اپنی رپورٹ پینتالیس دن میں دے گا، دھاندلی ثابت ہونےپرآرٹیکل اٹھاون کےتحت اسمبلی تحلیل کردی جائےگی اور نگراں حکومت کاقیام سیاسی جماعتوں کی مشاورت سےعمل میں آئےگا۔

الیکشن سےمتعلق تین اداروں کےسربراہوں کی تقرری مشاورت سےہوگی، مسودےپرمسلم لیگ ن،پی ٹی آئی،پیپلزپارٹی،بی این پی دستخط کرےگی،شاہ محمودقریشی نےبتایا کہ اسحاق ڈارنےعمران خان کوخط لکھ کربتایا ہےکہ تمام جماعتیں مسودےپرمتفق ہیں۔

وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار کا کہنا ہےکہ پی ٹی آئی اورن لیگ معاہدے کی تفصیل پارلیمانی جماعتوں کو بھیج دی گئی ہے۔

سرکاری ذرائع کے مطابق پارلیمانی رہنماؤں کوبھیجی گئی معاہدےکی تفصیل میں بتایا گیا ہے کہ جوڈیشل کمیشن مجوزہ آرڈیننس کےتحت ہی کام کریگا۔

 اسحاق ڈار کا کہنا ہے کہ وزیراعظم منگل کوپارلیمانی رہنماؤں سےملاقات کریں گے، جس میں وزیراعظم پارلیمانی جماعتوں سے معاہدے پر تبادلہ خیال کرینگے۔

اس موقع پر شاہ محمود قریشی کہنا تھا کہ دھاندلی ثابت ہوگئی تواسمبلیاں توڑناپڑیں گی تحریک انصاف میں نئےانتخابات سےپہلےتمام عہدیداروں کوفارغ کردیا گیا ہے، الیکشن ہونے تک عمران خان کےنامزدافراد پارٹی امورچلائیں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں