حکومت نے بجلی سستی کرنے کے بجائے اُلٹا مہنگی کردی -
The news is by your side.

Advertisement

حکومت نے بجلی سستی کرنے کے بجائے اُلٹا مہنگی کردی

اسلام آباد: پانچ ماہ تک عالمی سطح پرتیل سستا ہوتا رہا اور حکومت نے تیل سے بننے والی بجلی سستی کرنے کے بجائے اُلٹا مہنگی کردی ہے۔

نوازحکومت ایسے کاموں میں ماہر ہوچکی ہے، جیسے پہلے پیٹرولیم مصنوعات معمولی سستی کرکے عوام کو ٹرخاتی رہی اور اب مہنگی بجلی بیچ کر عوام کی جیبوں سے اربوں روپے نکالنے کی باتیں زبان زدِ عام ہیں۔

پانچ ماہ میں عالمی منڈی میں خام تیل تیس فیصد سستا ہوچکا ہے جبکہ پاکستان میں بجلی پیدا کرنے والا فرنس آئل صرف آٹھ فیصد سستا کیا گیا ، دوسری جانب ڈیزل کی قیمت بھی پانچ ماہ میں صرف پندرہ فیصد کم کی گئی۔

ملک میں تقریباً پچاس فیصد بجلی فرنس آئل اور ڈیزل سے بنتی ہے، حکومت نے بجلی سستی کرنے کے بجائے اُلٹا 52 پیسےفی یونٹ مہنگی کردی۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ عالمی منڈی میں کمی کے تناسب سے ملک میں فرنس آئل سے بننے والی بجلی 4 روپے فی یونٹ سستی ہونی چاہیئے، ڈیزل سے بننے والی بجلی 5 روپے فی یونٹ تک سستی کرنی چاہیئے لیکن حکومت بیچاری عوام کو ریلیف دے یا آئی ایم ایف کی مانے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں