site
stats
بزنس

حکومت نے سیلز ٹیکس کی شرح بلندترین سطح پر پہنچادی

اسلام آباد: حکومت نے پیٹرولیم مصنوعات پر عائد سیلز ٹیکس کی شرح پانچ فیصد بڑھاکر ملکی تاریخ کی بلندترین سطح ستائیس فیصد پر پہنچادی۔ حکومت کو اب اٹھائیس ارب روپے اضافی ملیں گے۔عوام نے پیٹرولیم مصنوعات پر اضافی ٹیکس لگا کر عوام پر ایک اور بوجھ ڈال دیا۔

تفصیلات کے مطابق جوں جوں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں کم ہوتی گئیں اسحاق ڈار ٹیکس بڑھاتے گئے۔ابھی تیل کے ہر لیٹر پر سیلز ٹیکس کی شرح کو سترہ سے بائیس فیصد ہوئے ایک مہینہ ہی گذرا تھا کہ اس شرح میں مزیدپانچ فیصدکا یکدم اضافہ کردیاگیا۔

شہری پیٹرولیم مصنوعات کےخریدے جانے والے ہر لیٹر پرستائیس فیصد سیلز ٹیکس ادا کریں گے۔ معاشی ماہرین کا کہنا ہے کہ عالمی منڈی میں تیل کی قیمت میں کمی کےباوجود حکومت عوام تک پورا فائدہ نہیں پہنچانا چاہتی۔

فی لیٹر پیٹرول پر تیس روپے ٹیکس ہے۔ جبکہ خاص طبقوں کو ٹیکسوں پر چار سو ستتر ارب روپے کی چھوٹ ہے۔ معاشی ماہرین کا کہنا تھا کہ کل جب عالمی منڈی میں تیل کی قیمتیں پھر بڑھیں گی توکیا یہ ستائیس فیصد سیلز ٹیکس پھرسےسترہ فیصد تک آئےگا؟

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top