The news is by your side.

Advertisement

حکومت ہارس ٹریڈنگ کے خاتمے کیلئے سنجیدہ نہیں، عمران خان

اسلام آباد: تحریکِ انصاف کے چیئرمین عمران خان کا کہنا ہے کہ حکومت ہارس ٹریڈنگ کے خاتمے کیلئے سنجیدہ نہیں، خیبر پختونخوا میں ہارس ٹریڈنگ ہوئی تو خود کو منظر عام پر لائیں گے۔

اسلام آباد سے جاری بیان میں تحریکِ انصاف کے چئیرمین عمران خان کا کہنا تھا کہ حکومت ہارس ٹریڈنگ کے خاتمے کے لئے بائیسویں ترمیم میں سنجیدہ نہیں تھی، ایسا ہوتا تو نواز شریف اس مشکل وقت میں سعودی عرب جانے کا نہیں سوچتے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ سینیٹ انتخابات کے لئے کسی پا رٹی سے کوئی ڈیل نہیں ہوئی، پی ٹی آئی نے اے پی سی میں شرکت بھی ہارس ٹریڈنگ کے خاتمے کے لئے کی تھی۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ سابق صدر آصف زرداری سے صرف ہارس ٹریڈنگ کے خاتمے پر بات ہوئی ہے، سینیٹ انتخابات میں کسی غیر جمہوری فعل کے لئے پیپلز پارٹی یا مسلم لیگ ن کو سپورٹ نہیں کریں گے۔

واضح رہے کہ تحریکِ انصاف کے چیئرمین عمران خان اور سابق صدر آصف زرداری کے درمیان ٹیلی فونک رابطہ ہوا، جس میں دونوں رہنماؤں کے درمیان سینیٹ انتخابات کے حوالے سے تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔

 دوران گفتگو عمران خان کا کہنا تھا کہ ہارس ٹریڈنگ سیاستدانوں کے ماتھے پر سیاہ دھبہ ہے لہذا 22 ویں آئینی ترمیم نہ صرف سینیٹ انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ روکنے میں مددگار ثابت ہوگی بلکہ مستحکم جمہوریت کے لئے بھی سنگ میل ثابت ہوگی۔

چیئرمین پاکستان تحریک انصاف کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی کو چاہئے کہ وہ اچھے اقدامات پر حکومت کی حمایت کرے۔

اس موقع پر سابق صدر آصف زرداری کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی نے ہمیشہ جمہوریت کے لئے قربانیاں دیں اور اس کے استحکام کے لئے کوشاں بھی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں