خبردار! نان اسٹک برتن کینسر کا باعث بن سکتےہیں -
The news is by your side.

Advertisement

خبردار! نان اسٹک برتن کینسر کا باعث بن سکتےہیں

کراچی (ویب ڈیسک)- نان اسٹک فرائی پان ایک ایسی سہولت ہے جس سے کچن میں کام کرنے والی تقریباً تمام ہی شہری خواتین لطف اندوز ہوتیں ہیں کیوں ان برتنوں کو استعمال کرنا اور بعد از استعمال دھونا انتہائی آسان ہے لیکن خبردار یہ فرائی پان آُپ کی صحت کے لئے خطرناک بھی ثابت ہوسکتا ہے۔

نان اسٹک فرائی پان بنیادی طور دھات کے بنے ہوئے ہوتے ہیں اور ان کے اوپر’ٹیفلون‘نامی پرت چڑھی ہوئی ہوتی ہے جو کہ مختلف کیمیائی مادوں کا مجموعہ ہے۔ جن میں سے ایک کا نام پر’فلورو-اوکٹینک‘یا ’پی ایف اواے‘ہے۔

اسی کیمیکل کے باعث جب بھی نان اسٹک برتنوں کو زیادہ درجہٗ حرارت پر استعمال کیا جاتا ہے تو ان برتنوں سے کیمیائی دھواں برآمد ہوتا ہے جو کہ’ٹیفلون فلو‘نامی بیماری کا باعث بنتا ہے۔

لیکن بات یہاں ختم نہیں ہوتی، جدید ریسرچ سے ثابت ہوا ہے کہ فلورو-اوکٹینک نامی یہ کیمیکل جب تجربہ گاہ کے چوہوں پر استعمال کیا گیا تو ان میں ایسی رسولیاں پیدا ہونے لگیں جو کہ کینسر کا باعث ہوتی ہیں۔ حالانکہ ابھی اس کیمیکل کے استعمال سے انسانی جسم میں کینسرکا مرض پیدا ہونے کی مستند شواہد نہیں ملے ہیں لیکن اس خطرے کو نظر انداز نہیں کیا جاسکتا۔

ماہرین کا کہنا ہے کہا اس خطرے سے بچاؤ کے لئے عوام کو چاہئے کہ نان اسٹک برتنوں میں صرف لکڑی کےچمچے استعمال کریں تاکہ ٹیفلون کی تہہ اکھڑ کر کھانے میں شامل نہ ہوسکے اور اگر برتن کی سطح سے یہ تہہ اترنے لگے تو فوری طور پر اس کا استعمال ترک کردیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں