The news is by your side.

Advertisement

خیبر پختونخوا : خونی بلدیاتی الیکشن، 14افرادجاں بحق، متعدد زخمی

پشاور: خیبر پختونخوا میں بلدیاتی انتخابات خونی انتخابات میں بدل گئے فائرنگ اورپرتشددواقعات میں چودہ افراد جاں بحق اور درجنوں زخمی ہوگئے۔

خیبر پختونخوا میں بلدیاتی انتخابات کا دنگل، نئے پیکٹ میں پرانا کے پی کے ہی رہا۔ ہوائی فائرنگ اور ہاتھا پائی سے سات افراد جاں بحق اور متعدد زخمی ہوگئے۔

 ڈی آئی خان میں فائرنگ سے دوافراد جان کی بازی ہار گئے، کرک کے شیخان بانڈہ میں پولنگ کے دوران فائرنگ میں دو افراد جان سے گئے ۔

کوہاٹ کے علاقے میروزئی میں پولنگ اسٹیشن کے قریب فائرنگ سے دوافراد جاں بحق دو زخمی ہوگئے چارسدہ یونین کونسل شیر پاؤ میں ووٹوں کی گنتی کے دوران فائرنگ سے ایک شخص جاں بحق دو افراد زخمی ہوگئے۔

  پشاور کے علاقے تیرہ پایان میں پولنگ اسٹیشن میں فائرنگ سے چھ افراد زخمی ہوئے ۔ایبٹ آباد یوسی مجوہان میں فائرنگ سے جنرل نشت کا امیدوار زخمی ہوا۔

 مردان کی یوسی جمپار میں دوگروہوں میں تصادم ہوا جس میں امیدوار شدید زخمی ہوگیا،مالاکنڈ کی یوسی کوپر کے پولنگ اسٹیشن باغ دین میں پی ٹی آئی اور پیپلز پارٹی کے کارکنوں میں فائرنگ کا تبادلہ ہوا۔

 صوابی میں داگئی یونین کونسل میں خواتین کے پولنگ اسٹیشن کے قریب عوامی جمہوری اتحاد کے امیدوار کے بیٹے نے ہوائی فائرنگ کردی جس سے خوف ہراس پھیل گیا۔

خیبر پختونخوا کے متعدد پولنگ اسٹیشن کے باہر فائرنگ اور ہاتھا پائی کےدرجنوں واقعات رونما ہوئے۔ ۔پشاور انتخابات کےدوران زخمی ہونےوالے پچیس افراد کولیڈی ریڈنگ اسپتال لایاگیا۔

 کے پی کے میں بلدیاتی انتخابات کے دنگل میں جہاں بہت سے پرتشدد واقعات پیش آئے ۔۔وہیں اپنے فرائض کی انجام دہی کرنے والے میڈیا کے نمائندوں کو بھی تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔

پشاور کے علاقے سٹی ڈسڑکٹ کالج میں اے این پی کے کارکنوں نے اے آر وائی نیوز کے رپورٹر عدنان طارق اور شہزاد محمود سمیت دیگر میڈیا کے نمائندوں کو تشدد کا نشانہ بنایاگیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں