site
stats
عالمی خبریں

داعش کے بڑھتے حملوں کےسبب تیونس میں ایمرجنسی نافذ

تیونس: صدرمحمد الباجی قائد السبسی نے گزشتہ دنوں ساحل پر ہونے والے خون آشام حملے کے تناظرمیں ملک بھرمیں ہنگامی حالت کے نفاذ کا اعلان کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق تیونس کے صدر محمد الباجي قائد السبسي نے ملک بھرمیں ایمرجنسی نافذ کردی ہے، مبصرین کے مطابق ہنگامی حالات کےنفاذ کا اعلان تیونس میں داعش کےبڑھتے ہوئےحملوں کےتناظرمیں کیا گیاہے۔
تیونس کے صدرنے ایمرجنسی کے نفاذ کے موقع پرقوم سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ حالات کا تقاضا ہے غیر معمولی اقدامات کئے جائیں۔

ایمرجنسی کے نفاذ کے بعد سیکیورٹی فورسز کے اختیارات میں مزید اضافہ ہوجائے گا جبکہ عوام کے حقوق کم کردئیے جائیں گے۔

حکام پہلے ہی ملک میں سخت سیکیورٹی انتظامات کرچکے ہیں جن کے تحت 1400 سے زائد مسلح اہلکاروں کو ہوٹلوں اور ساحلوں پر تعینات کیا گیا ہے۔

آٹھ روزقبل ایک مسلح شخص نے ساحل پرواقع ایک سیاحتی مرکز پرحملہ کیاتھا جس میں اڑتیس غیرملکی سیاح ہلاک ہوگئےتھے،جس کےبعدتیونس پربین الاقوامی سطح پردباؤ بڑھ گیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top