site
stats
پاکستان

دریائے سندھ میں پانی کی سطح میں مسلسل اضافہ

 کچے: دریائے سندھ میں پانی کی سطح روز بروز بلند ہونے لگی، سیلاب کے خطرے اور وزیرِاعلیٰ کے احکامات کے باوجود حفاظتی انتظامات دکھائی نہیں دے رہے۔

دریاؤں میں پانی ضرورت سے زیادہ ہوتے ہی سیلاب سندھ کی جانب تیزی سے بڑھنے لگا۔۔ ریلے سے کچے کی ہزاروں ایکڑ پر مشتمل زمینیں زیرِآب آگئیں، چشمہ بیراج پر پانی کا اخراج چارلاکھ آٹھ ہزار کیوسک ہے جبکہ تونسہ بیراج میں ساڑھے چارلاکھ کیوسک پانی کا اخراج ریکارڈ کیا گیا۔

محکمہ آبپاشی کے مطابق گڈو کے مقام پر نچلے درجے کا سیلاب ہے اور پانی کا بہاؤ ساڑھے تین لاکھ کیوسک ہے، سیلاب تیزی سے سکھربیراج کی جانب بڑھ رہا ہے، سکھر بیراج میں پانی کی سطح میں اضافہ ساڑھے تیرہ ہزار چھ کیوسک ریکارڈ کیا گیا ہے جبکہ تقریبا پونے تین لاکھ کیوسک پانی سکھربیراج کے مقام سے گزررہا ہے۔

گڈو میں درمیانے درجے کے سیلاب کی وجہ سے کچے کے علاقے زیرِآب آگئے اور سات ہزار ایکڑا پر مشتمل فصلیں بھی ڈُوب گئیں، محکمہ آبپاشی کے مطابق گڈو بیراج میں آئندہ چوبیس گھنٹے کے دوران پانی کی سطح میں پانچ لاکھ کیوسک تک اضافہ ہوگا۔

سکھر بیراج میں بھی پانی کی سطح میں اضافے کے خدشات ہیں تاہم محکمہ آبپاشی و زراعت تاحال خوابِ غفلت کا شکارہیں، وزیرِاعلیٰ کے احکامات کے باوجود نہ توکوئی وارننگ جاری کی گئی ہے اورنہ ہی مکینوں کو محفوظ مقامات کی طرف منتقل کیا گیا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top