The news is by your side.

Advertisement

دمام کی مسجد میں خود کش دھماکہ، شدت پسند تنظیم دولت اسلامیہ نے ذمہ داری قبول کرلی

دمام:  سعودی عرب کے شہر دمام کی مسجد میں نمازِ جمعہ کے دوران خود کش دھماکے کی ذمہ داری شدت پسند تنظیم دولت اسلامیہ نے قبول کرلی ہے، دھماکے کے نتیجے میں چار افراد جاں بحق ہوگئے تھے ۔

اس دھماکے کی ذمہ داری شدت پسند تنظیم دولت اسلامیہ نے سوشل میڈیا پر جاری کردہ پیغام کے ذریعے قبول کی ہے۔

مشرق وسطیٰ میں فرقہ واریت کا عفریت پاؤں پھیلا رہا ہے ،عراق اور شام کے بعد اب سعودی عرب دہشت گردوں کے نشانے پر آگیا ہے، سعودی عرب کے شہر دمام میں نماز جمعہ کے دوران دہشت گردوں نے امام حسین نامی مسجد میں خود کش دھماکے کی کوشش کی ۔

تاہم حملہ آور کو مسجد میں داخل ہونے کا موقع نہ مل سکا ، سیکورٹی اہلکاروں کی جانب سے مسجد میں داخل ہونے سے روکے جانے پر حملہ آور نے خود کو دھماکے سے اڑا لیا۔ دھماکے کے نتیجے میں سیکیورٹی اہلکار سمیت تین افراد جاں بحق ہو گئے۔

سعودی وزارت داخلہ کے مطابق حملہ آور برقع پہنے ہوئے تھا اور روکے جانے پر اس نے خود کو مسجد کے دروازے پر دھماکے سے اڑالیا، حملہ آور مسجد میں داخل ہونے میں کامیاب ہو جاتا تو بڑی تعدا د میں جانی نقصان کا خدشہ تھا۔

اس سے قبل بھی جمعے کو سعودی عرب کے صوبے قطیف میں نمازِ جمعہ کے دوران مسجد میں خودکش حملہ ہوا تھا، جس کے نتیجے میں اکیس افراد جاں بحق اور ایک سو تئیس زخمی ہوگئے تھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں