The news is by your side.

Advertisement

دنیا کی کوئی طاقت کشمیرکو پاکستان سے الگ نہیں کرسکتی، نوازشریف

کشمیر: وزیرِاعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ کشمیر کو شامل کئے بغیر مذاکرات کے کسی ایجنڈے کو مکمل نہیں سمجھتے اور پاکستان کشمیر کی آزادی کے لئے سیاسی، سفارتی اور اخلاقی حمایت جاری رکھے گا۔

آزاد کشمیر کی قانون ساز اسمبلی اور کشمیر کونسل کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیرِاعظم نواز شریف کا کہنا تھا کہ طاقت کے زور پر کشمیریوں کی جدوجہد کو دبایا نہیں جا سکتا، کشمیر پاکستان کی شہہ رگ ہے، اس لئے کشمیر کے ساتھ اپنے تعلق اور رشتے کو نبھائیں گے۔

  وزیرِاعظم نواز شریف کا کہنا تھا کہ کشمیریوں کو خوف زدہ کرنے کے لئے وادی میں سات لاکھ مسلح فوجی تعینات کئے گئے لیکن اس کے باوجود کشمیری عوام کےجذبے متذلزل نہیں ہوئے، خطے میں دیرپا امن کا قیام مسئلہ کشمیر کو حل کئے بغیر ناممکن ہے۔

وزیرِاعظم نواز شریف نےکہا کہ دنیا کی کوئی طاقت کشمیر کو پاکستان سے الگ نہیں کرسکتا، ان کا کہنا تھا سلامتی کونسل کی قراردادوں  عملدرآمد نہ ہونا باعث تشویش ہے، جنرل اسمبلی اوردیگرپلیٹ فارمز کی توجہ مسئلہ کشمیر کی جانب مبذول کرائی اور اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل بان کی مون سے بھی بات کی۔

آزاد کشمیر میں ترقیاتی کاموں سے متعلق وزیرِاعظم کا کہنا تھا کہ کشمیر میں ترقیاتی کاموں کیلئے وسائل مہیا کررہے ہیں، نیلم جہلم منصوبے سے بجلی کے ساتھ عوام کو روزگار بھی ملے گا اور خواہش ہے کہ کشمیر بھی ترقی اور آزادی کی راہ پر گامزن ہو، حکومت پاکستان مری ایکسپریس وے کو مظفرآباد تک بڑھائے گی جبکہ پاک چین اکنامک کوری ڈور سے خطے کو فائدہ پہنچے گا اور خنجراب سے لے کر اسلام آباد تک سڑک بھی بنائی جارہی ہے، جس پرکام شروع ہوچکا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں