site
stats
اہم ترین

دھاندلی ثابت نہ ہوئی تودھرناختم کردیں گے، عمران خان

اسلام آباد: چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے دھرناختم کرنے کیلئےایک ماہ میں غیرجانبدار ججوں سے عدالتی تحقیقات کامطالبہ کردیا۔

ڈی چوک پر دھرنے سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ خود دھاندلی کے ذریعے اقتدار تک پہنچنے والے شفاف انکوائری نہیں کرا سکتے۔ تحقیقات حکومت نہیں بلکہ سپریم کورٹ کرے انکوائری کرنے والے ایسے غیر جانبدار لوگ ہوں جن پر سب کو اعتماد ہو۔

ان کا کہنا ہے کہ دھرنے والے قوم کے حقوق کی جنگ لڑرہے ہیں،ظالم تبدیلی کے خلاف اکٹھے ہوگئے، نواز شریف اقتدار میں آکر ارب پتی بن گئے ہیں، چھوٹا سا طبقہ امیر اور قوم غریب ہورہی ہے، تھر میں بچے مر رہے ہیں اور وزیراعلیٰ کو کچھ پتا نہیں، ہر کسی کو آج نیا صوبہ چاہئے، سندھ کے لوگوں کو تقدیر بدلنے کا موقع دیں گے، 21 نومبر کو لاڑکانہ میں جلسہ اور سندھیوں کو آزاد کرنے آرہا ہوں۔

عمران خان نے کہا کہ  بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کا پاکستان اور مسلمانوں کی طرف رویہ ناقابل برداشت ہے مگر ایک بات تسلیم کرنی چاہئے کہ وہ ایک ایماندار شخص ہیں ، باریاں لینے والوں نے ملک تباہی کے دھانے پر پہنچا دیا جو مرضی کہہ لیں بھارتی وزیراعظم ایماندار شخص ہیں جو لوٹی ہوئی دولت واپس لا رہے ہیں ہمارے حکمرانوں کو بھی ان سے سیکھنا چاہیے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top