The news is by your side.

Advertisement

دھرنوں سے معیشت کوایک ہزارارب کا دھچکا لگا،حکومتی جواب

اسلام آباد:  پاکستان مسلم لیگ ن نے دھرنوں سے متعلق جواب سپریم کورٹ میں جمع کرادیا ہے ، جواب میں کہا گیا ہے کہ دھرنوں سے معیشت کو ایک ہزارارب روپے سے زائد کا دھچکا لگاہے۔

سپریم کورٹ میں دھرنوں سے متعلق جمع کرائے گئے جواب میں مسلم لیگ ن کی جانب سے کہا گیا ہے کہ تحریک انصاف اور عوامی تحریک کے دھرنے آرٹیکل چاراور پانچ کے منافی ہیں، دونوں جماعتوں کے رہنما آزادی اظہار رائےکا غلط استعمال کررہے ہیں، دھرنوں کی وجہ سےعام شہریوں کی نقل وحرکت کاحق تلف نہیں کیا جاسکتا۔

مسلم  لیگ ن نے جواب میں کہا ہےکہ انتخابات میں دھندلی کی شکایت کا واحد راستہ الیکشن پٹیشن دائر کرنا ہوتا ہے، پی ٹی آئی نے کئی الیکشن پٹیشنز دائر کر رکھی ہیں، جس کے بعد دھرنوں کا جواز نہیں رہتا، دونوں جماعتوں نے بدنیتی سے ہاتھ ملایا۔

جواب میں کہا ہے کہ آزادی اورانقلاب مارچ سے امن وامان کی صورتحال کو سخت نقصان پہنچا جبکہ معیشت کوایک ہزارارب روپے سے زائدکادھچکا لگا۔

جواب میں مزید کہا گیا ہے کہ دوست ملک کے صدر دھرنوں کی وجہ سے نہیں آسکے، جس سے بین الاقوامی طور پر بدنامی ہوئی، آئینِ پاکستان تمام شہریوں کے تحفظ کی بات کرتا ہے چند لوگوں کی نہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں