site
stats
عالمی خبریں

دہشت گردی کا الزام، 4سعودی خواتین کو سزائے قید

ریاض : سعودی عرب کی ایک فوج داری عدالت نے دہشت گردی اور تکفیری نظریات کی ترویج کے الزام میں چار خواتین کو چھ سے 10 سال قید کی سزائیں سنائی ہیں۔

سزا پانے والی خواتین شدت پسند تنظیم القاعدہ سے بھی رابطے میں رہی ہیں اور گذشتہ کچھ عرصے کے دوران گمراہ فرقوں کی حمایت میں سرگرم پائی گئی ہیں، ریاض کی عدالت کی جانب سے جاری مقدمہ کی تفصیلات میں بتایا گیا ہے کہ سزا یافتہ اپنے عزیز و اقارب کو بیرون ملک جنگی محاذوں پر’جہاد‘ کے لیے خود تیار کرکے بھجواتی رہی ہیں۔

ان کے خیال میں سعودی شہریوں پر جہاد ’فرض عین‘ کی حیثیت رکھتا ہے، ان خواتین نے نہ صرف خود جنگی تربیت حاصل کر رکھی ہے بلکہ وہ اپنے ساتھ کئی دوسری خواتین کو بھی شامل کرنے کی کوشش کرتی رہی ہیں۔ ان میں سے بعض نے بیرون ملک القاعدہ تنظیم کے لیے فنڈز بھی بھجوائے ہیں۔

دوسری جانب سعودی عرب کی ایک دوسری فوج داری عدالت نے قطر میں امریکی فوج پر دہشت گردانہ حملوں کی منصوبہ بندی میں ملوث 41 ملزمان میں سے 14 کو چھ ماہ سے 23 سال تک قید کی سزائیں سنائی ہیں۔ ان ملزمان پر عراق اور شام میں لڑائی کے لیے سعودی شہریوں کو بھرتی کرنے اور دہشت گرد گروپوں کے لیے عطیات جمع کرنے کے الزامات بھی عائد  کیے گئے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top