The news is by your side.

Advertisement

رینجرز اختیارات کامعاملہ قانون کے مطابق جلدحل ہوگا، مولابخش چانڈیو

کراچی: وزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ کے مشیر برائے اطلاعات مولابخش چانڈیو نے سندھ اسمبلی میں حزب اختلاف کے ان الزامات کو رد کیا ہے کہ حکومت رینجرز کو بلیک میل کر رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ مخالف جماعتیں رینجرز کے اختیارات میں توسیع کے معاملے پر غیر ضروری شور شرابہ کرکے اس معاملے کو تکراری بنانے کی کوشش کر رہی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعلیٰ سندھ نے کئی مرتبہ یہ بات واضع کردی ہے کہ رینجرز سندھ حکومت کے ساتھ ہے اور سندھ حکومت رینجرز کے ساتھ ہے اور رہے گی، انہوں نے مزید کہا کہ رینجرز کے اختیارات میں توسیع کا معاملہ قانونی کی ر و سے بہت جلد حل ہوجائیگا۔

مولابخش چانڈیو نے کہا کہ اپوزیشن سے پی پی پی کی کامیابیاں، سندھ پولیس اور رینجرز کے تعاون کے ساتھ کراچی میں امن امان کی بحالی، برداشت نہیں ہو رہی، اور اپوزیشن اپنی بیان بازیوں اور شورشرابے سے بے یقینی اور غلط فہمیاں پیدا کرکے ایک ہی وقت میں حکومت اور رینجرز کو برہم کرنے کے ساتھ اپنے منظوم مقاصد حاصل کرنے کی کوشش کر رہی ہے اور ان کو رینجرز کے اختیارات کی توسیع سے کوئی دلچسپی نہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ بلدیاتی انتخابات کے بعد اب اپوزیشن جماعتیں خوفزدہ ہوکر حکومت کے خلاف غیرجمہوری اور غیر قانونی اقدامات کر رہی ہیں، لیکن سندھ کی عوام اب پہلے سے زیادہ باشعور ہوچکی ہے اور وہ اب آج تو کیا مستقبل میں بھی ان کا ساتھ نہیں دے گی۔

مشیر اطلاعات مولابخش چانڈیو نے کہا کہ اپوزیشن لیڈر نے نہ صرف منتخب صوبائی اسمبلی اور منتخب اراکین کی بلکہ سندھ کی عوام کی توہین کی ہے ، وزیراعلیٰ سندھ کی طرف سے ایم کیوایم کی رینجرز پالیسی کے بارے میں میڈیا میں چلنے والے بیان کو رد کرتے ہوئے مشیر اطلاعات نے کہا کہ وزیراعلیٰ سندھ نے ایسا کوئی بیان نہیں دیا، اور میڈیا میں ان کے حوالے سے چلنے والی خبر بلکل بے بنیاد اور من گھڑت ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں