زہریلے سانپ کے ساتھ سیلفی لینا امریکی شہری کو مہنگا پڑگیا -
The news is by your side.

Advertisement

زہریلے سانپ کے ساتھ سیلفی لینا امریکی شہری کو مہنگا پڑگیا

ایک امریکی کو زہریلے کوڑیالے سانپ کے ساتھ سیلفی لینے کا نتیجہ ڈیڑھ لاکھ ڈالر کے اسپتال کے بل کی صورت میں بھگتنا پڑگیا۔

تفصیلات کے مطابق ٹوڈ فیسلر نامی شخص کاپورا بازو اس وقت زہر کی شدت سے نیلا پڑ گیا جب اس نے ایک کوڑیالے سانپ کو بل سے نکالا اور سیلفی لینے کی کوشش کی،جواب میں سانپ نے اسے ڈس لیا۔

ٹوڈ کا کہنا تھا کہ ’’جب سانپ نے مجھے کاٹا تو تکلیف کی شدت سے میں لرز رہا تھا اور میرے جسم میں بل پڑرہے تھے میری زبان منہ سے باہر آگئی تھی اورمیری آنکھیں ڈھلک گئی تھی‘‘۔

امریکی میڈیا کے مطابق سانپ اس قدر زہریلا تھا کہ دو اسپتالوں میں موجود تریاق اس کےعلاج میں صرف ہوا اورعلاج کے عوض اسے 153،161 امریکی ڈالر کا بل موصول ہوگیا۔

ٹوڈ کی انشورنس کمپنی اسپتال کے ساتھ مذاکرات کرہی ہے اور ممکن ہے کہ اسپتال کے بل کی ادائیگی کے لئے اسے حصہ ملانا پڑے۔

واضح رہے کہ ٹوڈ فیسلر کے پاس ایک سال سے زائد مدت سے ایک پالتو کوڑیالا سانپ موجود تھا لیکن وہ اس حادثے سے اس قدر خوفزدہ ہوا کہ اسے بھی آزاد کردیا۔

کیلی فورنیا میں ہر سال کوڑیالے سانپوں کے ڈسنے کے لگ بھگ 100 واقعات پیش آتے ہیں جن میں سے 10 سے 12 صرف سین ڈیاگو کاؤنٹی میں ہوتے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں